مسلمان زیادہ سے زیادہ ٹکٹ دینے والی پارٹی کی ہی حمایت کریں: کلب جواد

کانگریس‘ ایس پی اور بی ایس پی نے مسلمانوں کے لئے کچھ نہیں کیا حالانکہ کانگریس نے ملک پر 55 سال تک حکومت کی۔ بی جے پی بھی صرف اکثریتی برادری کو ہی خوش رکھنا چاہتی ہے۔

سہارنپور: معروف شیعہ عالم اور آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے سینئر رکن مولانا کلب جواد نے کہا ہے کہ مسلمانوں کو صرف ایسی جماعتوں کے ساتھ اتحاد کرنا چاہئے جو برادری کے ارکان کو کافی نشستیں دے سکیں۔ انہوں نے دیوبند میں نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ جب مسلمانوں کے پاس حکومتوں کو بنانے یا گرانے کے لئے کافی نشستیں ہوں گی تب ہی انہیں وہ عزت ملے گی جس کے وہ خواہشمند ہوں۔

 مولانا جواد نے کہا کہ 1947 میں جناح نے ملک کی تقسیم کی بہت بڑی غلطی کی تھی۔ اگر ملک تقسیم نہ ہوتا تو ہندوستان میں 60 کروڑ مسلمان ہوتے اور کسی بھی سیاسی جماعت کو ان پر انگشت نمائی کی ہمت نہ ہوتی۔ مولانا جواد نے مزید کہا کہ سیاسی جماعتیں مسلمانوں کے لئے کچھ بھی کرنے میں ناکام رہی ہیں۔

 کانگریس‘ ایس پی  اور بی ایس پی نے مسلمانوں کے لئے کچھ نہیں کیا حالانکہ کانگریس نے ملک پر 55 سال تک حکومت کی۔ بی جے پی بھی صرف اکثریتی برادری کو ہی خوش رکھنا چاہتی ہے۔ مولانا نے ایک 40 سالہ کسان کے ارکان خاندان سے ملاقات کی جو موضع تھتکی میں پولیس کے دھاوے کے دوران پراسرار طورپر فوت ہوگیا تھا۔

سہارنپور پولیس نے 5 ستمبر کو گاؤکشی کے الزام میں محمد ذیشان کو حراست میں لیا تھا اور بعدازاں دعویٰ کیا تھا کہ اس نے فرار ہونے کی کوشش کے دوران خود کو حادثاتی طورپر پیر میں گولی مارلی اور پھر خوفزدہ ہوکر فوت ہوگیا۔ اس کی بیوی نے پولیس میں شکایت درج کرائی تھی اور کہا تھا کہ پولیس نے اس کے شوہر پیٹ پیٹ کر ہلاک کردیا۔ ڈی آئی جی پولیس نے اس معاملہ کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.