مظفر نگر کے فرقہ وارانہ ہنگامے تقسیم ہند کے بعد بدترین تھے:اسدالدین اویسی

حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ نے مظفرنگر میں مجلس اتحادالمسلمین کی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ عوام اپنے گھروں اور مساجد کو چھوڑنے پر مجبور ہوگئے تھے۔

مظفرنگر: صدرکل ہند مجلس اتحاد المسلمین اسدالدین اویسی نے آج الزام عائد کیا کہ مظفرنگر کے فرقہ وارانہ ہنگامے تقسیم ہند کے بعد بدترین فرقہ وارانہ ہنگامے تھے اور تب حکمران سماج وادی پارٹی متاثرین کو انصاف فراہم کرنے میں ناکام رہی تھی۔

حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ نے مظفرنگر میں مجلس اتحادالمسلمین کی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ عوام اپنے گھروں اور مساجد کو چھوڑنے پر مجبور ہوگئے تھے۔

انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ اکھلیش یادو کی زیر قیادت سماج وادی پارٹی مسلمانوں کو صرف ووٹ بینک سمجھ رہی ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ وہ اترپردیش میں کل ہند مجلس اتحاد المسلمین کا وجود نہیں چاہتے ہیں کیونکہ یہ جماعت اقلیتوں کے امور کو موضوع بحث لارہی ہے۔

انہوں نے عوام کو ترغیب دی کہ وہ آئندہ سال کے اسمبلی انتخابات میں ان کی جماعت کو ووٹ دیں۔ رکن پارلیمنٹ نے دعویٰ کیا کہ ان کی جماعت نہ صرف مسلمانوں بلکہ ہندوؤں اور دلتوں کے مسائل کو موضوع بحث لارہی ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.