موضع میاں گنج(یوپی) کا نام مایاگنج رکھنے کی تجویز

اس ضمن میں پنچایت میں ایک قرارداد منظور کی گئی تھی۔ ضلع مجسٹریٹ رویندر کمار نے آج بتایا کہ انہوں نے پنچایت کی تجویز ایڈیشنل چیف سکریٹری پنچایت راج کو روانہ کردی ہے اور پنچایت کا نام تبدیل کرنے کا فیصلہ سرکاری سطح پر کیا جائے گا۔

اُناؤ (اترپردیش): اترپردیش کے ضلع اُناؤ کی ایک پنچایت کے موضع میاں گنج کا نام بدل کر مایاگنج رکھنے کی تجویز ریاستی حکومت کو بھیج دی گئی ہے۔

قبل ازیں اس ضمن میں پنچایت میں ایک قرارداد منظور کی گئی تھی۔ ضلع مجسٹریٹ رویندر کمار نے آج بتایا کہ انہوں نے پنچایت کی تجویز ایڈیشنل چیف سکریٹری پنچایت راج کو روانہ کردی ہے اور پنچایت کا نام تبدیل کرنے کا فیصلہ سرکاری سطح پر کیا جائے گا۔

یہ تجویز چہارشنبہ کے روز ایڈیشنل چیف سکریٹری کو بھیجی گئی ہے۔ اس سوال پر کہ آیا بلاک کا نام بھی بدل دیا جائے گا‘ ضلع مجسٹریٹ نے کہا کہ فی الحال صرف موضع کی پنچایت کے نام کی تبدیلی کی تجویز حکومت کو روانہ کی گئی ہے۔

جب پنچایت کا نام بدلا جائے گا تو بلاک کا نام بھی بدل جائے گا۔ضلع مجسٹریٹ نے ایک مقامی بی جے پی لیڈر بامبالال دیواکر کے مکتوب کا بھی تذکرہ کیا ہے جس میں انہوں نے پنچایت کا نام بدلنے کا مطالبہ کیا ہے۔

رکن اسمبلی نے یہ بھی کہا کہ 2017کے اسمبلی انتخابات کے دوران چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے پنچایت کا نام بدلنے کا وعدہ کیا تھا۔ موضع کی پنچایت کا ایک کھلا اجلاس 16 اگست کو موضع کی سربراہ نغمہ کی صدارت میں منعقد ہوا تھا جس میں یہ قرارداد منظور کی گئی۔

ریاستی حکومت کے پاس پہلے ہی علی گڑھ کا نام بدل کر ہری گڑھ‘ فیروزآباد کا نام بدل کر چندرانگر اور مین پوری کا نام بدل کر مائن نگر رکھنے کی تجویز زیرغور ہے۔ دیوبند کے بی جے پی رکن اسمبلی برجیش سنگھ نے اس مقام کا نام بدل کر دیورند رکھنے کا مطالبہ کیا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.