پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس ہنگامہ خیز ہوگا: ٹی ایم سی

کابینی کمیٹی برائے پارلیمانی امور 29 نومبر تا 23 دسمبر سرمائی اجلاس طلب کرنے کی سفارش کرچکی ہے۔

کولکتہ: ٹی ایم سی نے پیر کے دن اشارہ دیا کہ پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس ہنگامہ خیز ہوگا کیونکہ اپوزیشن جماعتیں ہندوستان کو ایک منتخبہ جمہوریت میں بدلنے سے روکنے کی تمام تر کوششیں کریں گی۔

کابینی کمیٹی برائے پارلیمانی امور 29 نومبر تا 23 دسمبر سرمائی اجلاس طلب کرنے کی سفارش کرچکی ہے۔

ٹویٹر پر ٹی ایم سی رکن راجیہ سبھا ڈیرک اوبرائن نے کہا کہ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ(ای ڈی) اور سی بی آئی کے ڈائرکٹرس کی میعاد 2 سے 5 سال کردینے کے 2 آرڈیننس جاری ہوچکے ہیں۔ 2 ہفتے بعد سرمائی اجلاس شروع ہونے والا ہے۔

اپوزیشن جماعتیں ہندوستان کو منتخبہ جمہوریت میں بدلنے سے روکنے کی تمام تر کوششیں کریں گی۔ ڈیرک اوبرائن نے اپنی ٹویٹ میں پیرٹ اسٹیکرس (پہلے 2 اور بعد میں 5) کا استعمال کیا۔ وہ 2013 میں سی بی آئی پر سپریم کورٹ کی تنقید کا بظاہر حوالہ دے رہے تھے۔

سپریم کورٹ نے اُس وقت سی بی آئی کو پنجرہ میں بند طوطا کہا تھا جو اپنے آقا کی بات سنتا ہے۔ ٹی ایم سی امکان ہے کہ سی بی آئی اور ای ڈی کے ڈائرکٹرس کی میعاد بڑھانے کے لئے مرکز کی طرف سے جاری آرڈیننس کا مسئلہ اٹھائے گی۔ وہ مہنگائی‘ کانوں کا احتجاج اور بی ایس ایف کا دائرہ ئ کار بڑھانے جیسے مسائل بھی اٹھائے گی۔

لوک سبھا میں ترنمول کانگریس قائد سدیپ بندھوپادھیائے نے جاننا چاہا کہ مرکز نے آرڈیننس کیسے جاری کئے جبکہ سرمائی اجلاس عنقریب شروع ہونے والا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.