پاکستانی ٹیم کی جیت کے بعد پنجاب میں 10 کشمیری طلبا پر حملہ

ایک واقعہ بھائی گروداس انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ ٹکنالوجی میں پیش آیا جو سنگرور ٹاؤن کے مضافات میں واقع ہے۔ دوسرا واقعہ موہالی کا ہے۔ پولیس نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

چندی گڑھ: پنجاب کے 2خانگی تعلیمی اداروں میں زیرتعلیم کم ازکم 10 طلبا کا الزام ہے کہ ٹی 20ورلڈ کپ کرکٹ میاچ میں اتوار کی رات 10 وکٹوں سے پاکستان کی جیت کے بعد ان پر حملہ ہوا۔ انہیں دھمکایا گیا اور ان کے ہاسٹل رومس میں توڑپھوڑ کی گئی۔

ایک واقعہ بھائی گروداس انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ ٹکنالوجی میں پیش آیا جو سنگرور ٹاؤن کے مضافات میں واقع ہے۔ دوسرا واقعہ موہالی کا ہے۔ پولیس نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

انجینئرنگ کالج کے 6طلبا نے الزام عائد کیا کہ یوپی اور بہار سے تعلق رکھنے والے ان کے ساتھی طلبا نے ان پر حملہ کیا۔ ہاسٹل کے عملہ نے کوئی مداخلت نہیں کی۔

ایک طالب علم نے فیس بک پر حملہ کی لائیو اسٹریم کی جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ آہنی راڈ اور لاٹھیوں سے حملہ ہورہا ہے۔

ایک طالب علم نے پولیس کو بتایا کہ مقامی پنجابی طلباانہیں بچانے آئے۔ طلبا نے کہا کہ وہ اپنے کمروں میں بیٹھے ہوئے تھے کہ ملزمین اندر گھس ئے اور انہیں مارنے پیٹنے لگے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.