پرینکا گاندھی ہنوز زیرحراست، مودی کے نام ویڈیو جاری

پرینکا گاندھی وڈرا نے منگل کے دن ایک ویڈیو جاری کرکے وزیراعظم سے پوچھا کہ مرکزی وزیر کو کیوں برطرف نہیں کیا گیا اور اس کے لڑکے کی گرفتاری کیوں نہیں ہوئی۔

سیتاپور؍ لکھنو: کانگریس قائد پرینکا گاندھی وڈرا نے جو 28 گھنٹوں سے ایف آئی آر کے اندراج کے بغیر زیرحراست ہیں‘ منگل کے دن سوال کیا کہ لکھم پور کھیری میں غریب کسانوں کو ہلاک کرنے والے شخص کو گرفتار کیوں نہیں کیا گیا۔ پرینکا گاندھی کی پارٹی کے ساتھیوں کا الزام ہے کہ پرینکا کو ان کے وکیلوں سے ملنے نہیں دیا جارہا ہے۔

کانگریسیوں کا دعویٰ ہے کہ سیتاپور کے پی اے سی بٹالین نمبر 2 کے گیسٹ ہاؤز کے اوپر ڈرون کیمرہ حرکت میں ہے۔ اسی گیسٹ ہاؤز میں پرینکا گاندھی کو رکھا گیا ہے۔ پرینکا گاندھی کے علاوہ کانگریس کے ریاستی صدر اجئے کمار للو‘ قومی سکریٹری دھیرج گرجر‘ یوتھ کانگریس صدر بی وی سرینواس اور پارٹی کے رکن قانون ساز کونسل دیپک سنگھ بھی زیرحراست ہیں۔

گرجر نے ہندی میں ٹویٹ کیا کہ حکومت‘ پرینکا گاندھی سے اتنی ڈری ہوئی ہے کہ وہ ان پر نظر رکھنے کے لئے ڈرون استعمال کررہی ہے۔ منگل کی صبح کانگریس ورکرس اور حامیوں کی تعداد کم تھی۔ 10 بجے کے بعد ساری ریاست سے پارٹی کارکن سیتاپور پہنچنے لگے اور اطراف کی تمام ہوٹلیں ان سے بھر گئیں۔عہدیداروں نے منگل کے دن بتایا کہ پرینکا گاندھی اور دیگر 10 افراد کے خلاف بطور احتیاط حراست سے متعلق دفعات کے تحت کیس درج کرلیا گیا ہے۔

  آئی اے این ایس کے بموجب پرینکا گاندھی وڈرا نے منگل کے دن ایک ویڈیو جاری کرکے وزیراعظم سے پوچھا کہ مرکزی وزیر کو کیوں برطرف نہیں کیا گیا اور اس کے لڑکے کی گرفتاری کیوں نہیں ہوئی۔

ہندی ویڈیو میں پرینکا نے کہا ”مودی جی‘ نمسکار‘ میں نے سنا ہے کہ آزادی کا امرت مہوتسو منانے آپ لکھنو آرہے ہیں‘ میں آپ سے پوچھنا چاہتی ہوں کہ آپ نے یہ ویڈیو دیکھا ہے‘ آپ کی سرکار کے ایک منتری کے بیٹے نے کسانوں کو کچل دیا‘اِس ویڈیو کو دیکھئے اور دیش کو بتائیے کہ اس منتری کو برخواست کیوں نہیں کیا گیا اور اس لڑکے کو گرفتار کیوں نہیں کیا“۔

کانگریس قائد نے 2 منٹ کے ویڈیو میں یہ بھی کہا کہ وزیر کے لڑکے کو گرفتار نہیں کیا گیا جبکہ اپوزیشن قائدین حراست میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ کسان ہی تھے جنہوں نے ملک کی آزادی کے لئے اپنی جانیں قربان کی تھیں۔ کانگریس نے اترپردیش کے لکھم پور کھیری واقعہ کا ویڈیو پوسٹ کیا۔ کانگریس کے ٹویٹر ہینڈل پر پیر کی رات 11:33 بجے یہ ویڈیو پوسٹ ہوا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی؍آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.