پنجاب کے پہلے دلت چیف منسٹر کی حلف برداری

حلف برداری کے بعد ابتدائی ریمارکس میں 58 سالہ چنی نے مرکز سے مطالبہ کیا کہ وہ متنازعہ زرعی قوانین واپس لے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی ”سیاہ“ زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کررہے کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے۔

چندی گڑھ: کانگریس قائد چرنجیت سنگھ چنی نے پیر کے دن پنجاب کے پہلے دلت چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیا۔

پچھلی امریندر سنگھ حکومت کے وزرا سکھجندر سنگھ رندھاوا اور او پی سونی کو گورنر پنجاب نے ڈپٹی چیف منسٹرس کی حیثیت سے حلف دلایا۔

حلف برداری کے بعد ابتدائی ریمارکس میں 58 سالہ چنی نے مرکز سے مطالبہ کیا کہ وہ متنازعہ زرعی قوانین واپس لے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی ”سیاہ“ زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کررہے کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے۔

تقریب حلف برداری میں جسے 11 بجے دن شروع ہونا تھا‘ تھوڑی تاخیر ہوئی۔ راہول گاندھی اس موقع پر موجود تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ او پی سونی کے نام کو تقریب حلف برداری سے کچھ دیر قبل منظوری دی گئی۔

رندھاوا‘ جٹ سکھ ہیں جبکہ سونی‘ کانگریس کا ہندو چہرہ ہیں۔ کانگریس ذات پات کا توازن برقرار رکھنا چاہتی ہے۔ پنجاب اسمبلی الیکشن کو 6ماہ سے بھی کم وقت رہ گیا ہے۔ پنجاب کی لگ بھگ 32 فیصد آبادی دلت ہے۔

اس میں ہندو اور سکھ دلت شامل ہیں۔ دوآبہ علاقہ میں دلتوں کی بڑی آبادی ہے۔ راہول گاندھی کے علاوہ ہریش راوت‘ اجئے ماکن‘ راجندر کور بھٹل‘ نوجوت سنگھ سدھو اور من پریت سنگھ بادل نے تقریب حلف برداری میں شرکت کی۔

کپتان امریندر سنگھ‘دکھائی نہیں دیئے۔ چنی نے کہا کہ وہ پنجاب کے عام آدمی کی آواز بنیں گے اور عوام کو ہمیشہ دستیاب رہیں گے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.