متوفی کسانوں کے انتم ارداس میں پرینکا گاندھی کی شرکت

کانگریس کارکنوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی حکومت کے اشارے پر پولیس انتظامیہ نے تانا شاہی کر رہے کانگریس لیڈروں اور کارکنوں کی گاڑیوں کو جگہ جگہ روک لیا گیا۔ انہیں نہیں جانے دیا گیا۔

لکھنؤ: کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے لکھیم پور کھیری میں گذشتہ ہفتہ تشدد کے شکار ہوئے متوفی کسانوں کے ‘انتم ارداس’ تقریب میں شرکت کیا اور متاثرہ خاندانوں کو انصاف دلانے کا تیقن دیا۔

پرینکا گاندھی واڈرا تشدد کے شکار چار کسانوں اور میڈیا نمائند رمن کشیپ کی انتم ارداس دعائیہ تقریب میں شامل ہوئیں اور ارداس تقریب میں گروہ گرنتھ صاحب جی کے سامنے ماتھا ٹیکا و شہید کسانوں نچھتر سنگھ،لوپریت سنگھ، گروندر سنگھ و دلجیت سنگھ اور میڈیا نمائندے رمن کشیپ کی روح کی تسکین کی دعا کی۔

انہوں نے میڈیا نمائندوں کے سوال پر کہا’آج میں انتم ارداس کی تقریب میں آئی ہوں۔ اس لئے کچھ بولوں گی نہیں۔ہاں یہ ضرورت ہے کہ آخری سانس تک کسانوں کی انصاف کی لڑائی لڑونگی۔ پرینکا نے اس دوران تشدد میں زخمی کسان بلجندر سنگھ سے بھی ملاقات کی اور ان کا حال چال معلوم کیا۔

پرینکا کا قافلہ صبح آٹھ بجے لکھنؤ ائیر پورٹ سے لکھیم پور کے لئے روانہ ہوا تھا۔ سیتاپور ٹول پلازہ پر پولیس نے قافلے کو کووڈ پروٹوکول کا حوالہ دیتے ہوئے روکا ۔اس دوران کانگریس کارکنوں اور پولیس اہلکار کے درمیان معمولی نوک جھونک بھی ہوئی جس کے بعد قافلے میں شامل کچھ گاریوں کو روک کر قافلے کو آگے روانہ کیا گیا۔

کانگریس کارکنوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی حکومت کے اشارے پر پولیس انتظامیہ نے تانا شاہی کر رہے کانگریس لیڈروں اور کارکنوں کی گاڑیوں کو جگہ جگہ روک لیا گیا۔ انہیں نہیں جانے دیا گیا۔ یہاں تک کہ قافلے کو لکھیم پور میں طے روٹ کے بجائے دوسرے روٹ پر بھٹکانے کی کوشش کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت نے پوری کوشش کی کہ محترمہ واڈرا کسانوں کی ارداس تقریب میں نہ پہنچ پائیں لیکن واڈرا کی کسانوں کے تئیں رحم دلی اور مضبوط قوت ارادی کی وجہ سے وہ وہاں پہنچیں اور پہنچ کر کسانوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.