کوئلہ کی کمی: پنجا ب کی 7 تھرمل یونٹیں بند

انڈیا پاور انجینئرس فیڈریشن (اے آئی پی ای ایف) کے ترجمان وی کے گپتا نے کہاکہ ہندستان کے بیشتر کوئلے سے چلنے والے بجلی پلانٹوں میں کوئلے کی کمی ہے۔ راپڑ اور لہر محبت میں کوئلہ کا اسٹاک بالترتیب 2.6اور 1.9دنوں کے لئے کافی ہے۔

چندی گڑھ: پنجاب میں کوئلہ کی کمی کے سبب بجلی بحران گہرا ہوتا جارہا ہے کیونکہ روپڑ تھرمل پاور کی چاروں یونٹیں، لہرا محبت تھرمل پاور کی چار میں سے تین یونٹیں بند ہوگئی ہیں۔ تلونڈی سابھو تھرمل پاور کی ایک یونٹ تکنیکی خرابی کے سبب بند ہوگئی ہے۔

پی ایس پی سی ایل کے ایک سینئر عہدیدار نے آج یو این آئی کو بتایا کہ ریاست میں بجلی کی کوئی کمی نہیں ہے کیونکہ موسم کی تبدیلی وجہ سے بجلی کی کم ہوئی ہے۔ ہفتہ اور کل اتوار کو چھٹی کے سبب مانگ کم رہے گی۔

تمام تین پرائیویٹ پاور پلانٹ کی دو دو یونٹیں چالو ہیں، راج پورا اور تلونڈی سابو پورے لوڈ پر چل رہی ہیں۔ جی وی کے کم لوڈ پر ہیں۔ سات تھرمل یونٹوں نے سنیچر کو دوپہر تک تین ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کی۔

رنجیت ساگر اور مکیریاں ہائییڈل پروجیکٹ سے ہائیڈرجنریشن 240میگاواٹ کی پیداوار ہورہی ہے اور کل ہائیڈرو پیداوار چار سو میگاواٹ رہی۔ دسہرہ پر کل زیادہ سے زیادہ بجلی کی مانگ تقریباً 8675 میگاواٹ اور سپلائی 1772لاکھ یونٹ رہی۔

انڈیا پاور انجینئرس فیڈریشن (اے آئی پی ای ایف) کے ترجمان وی کے گپتا نے کہاکہ ہندستان کے بیشتر کوئلے سے چلنے والے بجلی پلانٹوں میں کوئلے کی کمی ہے۔ راپڑ اور لہر محبت میں کوئلہ کا اسٹاک بالترتیب 2.6اور 1.9دنوں کے لئے کافی ہے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.