ناگالینڈ مزید 6 ماہ کیلئے گڑبڑزدہ علاقہ قرار: مرکز کا اعلامیہ

وزارت ِ داخلہ نے آج جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ مسلح افواج خصوصی اختیارات قانون میں 30 دسمبر سے 6 ماہ کے لئے توسیع کی جارہی ہے۔

نئی دہلی: ناگالینڈ‘ افسپا کے تحت مزید 6 ماہ کے لئے ”گڑبڑزدہ علاقہ“ رہے گا کیونکہ ریاست کی صورتِ حال ابھی بھی خطرناک ہے۔ مسلح افواج کے خصوصی اختیارات قانون واپس لینے بالخصوص جاریہ ماہ کے اوائل میں غلط شناخت کے معاملہ میں 14 عام شہریوں کی موت کے بعد اس مطالبہ میں شدت کے بیچ یہ اعلان کیا گیا ہے۔

وزارت ِ داخلہ نے آج جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ مسلح افواج خصوصی اختیارات قانون میں 30 دسمبر سے 6 ماہ کے لئے توسیع کی جارہی ہے۔

ریاست 1958سے متنازعہ افسپا کے تحت رہی ہے۔ برطانوی مسلح افواج خصوصی آرڈیننس 1942 سے متاثر ہوکر یہ قانون بنایا گیا ہے۔ مرکز کی جانب سے رجسٹرار جنرل اور سینسس کمشنر ویویک جوشی کی زیرصدارت اعلیٰ سطحی کمیٹی کی تشکیل کے 3 دن بعد یہ اعلامیہ جاری کیاگیا ہے۔

اس کمیٹی میں مرکزی مملکتی وزیر داخلہ پیوش گوئل‘ ممبر سکریٹری ہیں۔ کمیٹی کے دیگر ارکان میں چیف سکریٹری‘ ناگالینڈ کے ڈائرکٹر جنرل پولیس اور آسام رائفلس کے ڈائرکٹر جنرل اور دیگر ارکان بھی شامل ہیں۔ کمیٹی 45 دن کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرنے والی ہے۔

جمعرات کے روز جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا کہ مرکز کا یہ خیال ہے کہ ریاست ِ ناگالینڈ کا سارا علاقہ اتنا گڑبڑزدہ اور خطرناک حالت میں ہے کہ سیول طاقت کے لئے مسلح افواج کی مدد ضروری ہے لہٰذا اب مسلح افواج خصوصی اختیارات قانون 1958 (نمبر 28 آف 1958)کے تحت محصلہ اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے مرکزی حکومت یہ اعلان کرتی ہے کہ ریاست ِ ناگالینڈ کا سارا علاقہ 30 دسمبر 2021سے مزید6 ماہ کے لئے ”گڑبڑ وزدہ“ قرارپائے گا۔

اعلیٰ سطحی کمیٹی کے ممبر سکریٹری پیوش گوئل کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں یہ بات بتائی گئی۔ یہاں یہ تذکرہ مناسب ہوگا کہ ناگالینڈ کے عوام افسپا کی برخاستگی کا مطالبہ کرتے رہے ہیں۔ 3 دسمبر کو فوج نے 6 عام شہریوں کو غلطی سے شورش پسند سمجھتے ہوئے انہیں ہلاک کردیا تھا اور بعدازاں ضلع مون میں 8 دیہاتیوں کو ہلاک کردیا گیا۔

دیہی عوام برہمی کے عالم میں توڑپھوڑ پر اترآئے تھے اور انہوں نے ایک فوجی کو ہلاک کردیا۔ عوام کی برہمی کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت ِ ناگالینڈ نے 20 دسمبر کو خصوصی ایک روزہ اجلاس منعقد کیا تھا جس میں اسمبلی نے متفقہ طورپر افسپا کی منسوخی کا مطالبہ کرنے کی قرارداد منظو رکی تھی۔

اس قرارداد میں کہا گیا تھا کہ ایوان افسپا کی تنسیخ اور انصاف کی فراہمی کے لئے کئے گئے مطالبہ کی حمایت پر شہریوں اور مہذب سماج تنظیموں کی ستائش کرتا ہے اور تمام طبقات سے اپیل کرتا ہے کہ امن اور انصاف کے حصول کے لئے اپنی اجتماعی کوششوں میں جمہوری اصولوں اور عدم تشدد پر عمل کریں۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.