کانگریس لیڈر اورسابق کرکٹر کیرتی آزاد ٹی ایم سی میں شامل

کانگریسی لیڈر کیرتی آزاد کی ترنمول کانگریس میں شمولیت سیاسی طور پر اہم ہے۔ باخبر ذرائع کے مطابق، ترنمول کانگریس 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں ممتا بنرجی کو پی ایم نریندر مودی کے اہم چہرے کے طور پر پیش کرنے کے لیے بے چین ہیں۔

کلکتہ: بی جے پی کے سابق ایم پی اور کانگریس لیڈر کیرتی آزادنئی دہلی میں چیف منسٹرممتا بنرجی اور ابھیشیک بنرجی کی موجودگی میں ترنمول کانگریس میں شامل ہو گئے۔ کیرتی آزاد نے شمولیت سے قبل کہا کہ ممتا بنرجی ایک لڑنے والی لیڈر ہیں۔ پارٹی مجھے جو بھی دے گی میں وہی کروں گی۔ شمولیت کے بعد کیرتی آزاد نے کہا، "جب تک میں سیاست سے ریٹائر نہیں ہو جاؤں گا، میں ممتا بنرجی کی قیادت میں کام کروں گا۔

 آج ملک کو ان جیسے لیڈر کی ضرورت ہے۔ میری کوئی نسل، کوئی مذہب نہیں ہے۔ اگر میں سیاست کروں گا، تو میں اپنی پیروی کروں گا۔ بہن کا نظریہ۔ میں کام کروں گی۔ میں خوش قسمت ہوں، دیدی نے آج مجھے ترنمول کانگریس کا ممبر بنایا ہے۔” کانگریسی لیڈر کیرتی آزاد کی ترنمول کانگریس میں شمولیت سیاسی طور پر اہم ہے۔ باخبر ذرائع کے مطابق، ترنمول کانگریس 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں ممتا بنرجی کو پی ایم نریندر مودی کے اہم چہرے کے طور پر پیش کرنے کے لیے بے چین ہیں۔ اسی لیے ترنمول کاگنریس کی اعلیٰ قیادت بار بار کانگریس پر حملے کر رہی ہے۔ کانگریس کی قبولیت پر بھی سوال اٹھ رہے ہیں۔ اس صورت میں پہلے سشمیتا دیب اور پھر کیرتی آزاد کا میں شامل ہونا خاص اہمیت کا حامل ہے۔

کیرتی آزاد کا سیاست سے تعلق خاندانی ذرائع سے ہے۔ ان کے والد بہار کے سابق چیف منسٹر تھے۔ کیرتی آزاد ہندوستانی ٹیم کے رکن تھے جس نے 1983 کا ورلڈ کپ جیتا تھا۔ کیرتی دو بار بہار کے دروبھنگہ سے ایم پی منتخب ہوئے تھے۔ وہ بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ تھے۔ بعد میں انہوں نے بی جے پی لیڈر اور سابق وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر دہلی کرکٹ بورڈ اور ڈسٹرکٹ کرکٹ میں بدعنوانی کا الزام لگایا۔ اس کے بعد انہیں بی جے پی سے نکال دیا گیا۔ 23 دسمبر 2015 کو انہیں بی جے پی سے معطل کر دیا گیا۔ 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں کیرتی بھی کانگریس کے ٹکٹ پر دھنباد لوک سبھا حلقہ سے امیدوار بنائے گئے مگرا نتخاب ہار گئے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.