لکھم پور کھیری تشدد: مملکتی وزیر داخلہ کے لڑکے کے خلاف ایف آئی آر درج

کئی اپوزیشن قائدین نے اترپردیش کے اس ضلع کو جانے کی کوشش کی لیکن انہیں روک دیا گیا۔ جھڑپوں میں 8جانیں جانے کے ایک دن بعد 12ایف آئی آر درج ہوئی ہیں۔

لکھم پور۔کھیری/لکھنو: مرکزی وزیر اجئے مشرا کے لڑکے کے خلاف لکھم پور کھیر تشدد کے سلسلہ میں ایف آئی آر درج ہوچکی ہے۔ عہدیداروں نے پیر کے دن یہ بات بتائی۔

کئی اپوزیشن قائدین نے اترپردیش کے اس ضلع کو جانے کی کوشش کی لیکن انہیں روک دیا گیا۔ جھڑپوں میں 8جانیں جانے کے ایک دن بعد 12ایف آئی آر درج ہوئی ہیں۔

لکھم پور کھیر تشدد اترپردیش میں جہاں اسمبلی الیکشن ہونے والا ہے نیا ٹکراؤ بن گیا ہے۔ ایڈیشنل چیف سکریٹری (داخلہ) اوینیش کمار اوستھی نے کہا کہ حکومت اترپردیش 4مہلوک کسانوں کے ورثاء کو فی کس 45لاکھ روپئے معاوضہ اور مقامی سطح پر سرکاری نوکری دے گی۔

کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی وڈرا‘ صدر سماج وادی پارٹی اکھیلیش یادو‘ چیف منسٹر چھتیس گڑھ بھوپیش بگھیل‘ بی ایس پی کے اس سی مشرا اور عام آدمی پارٹی کے سنجے سنگھ کو گڑبڑ زدہ مقام کا دورہ کرنے سے روک دیا گیا ہے۔

یہ مقام ضلع مستقر سے لگ بھگ 80کیلومیٹر دور لکھنو سے 225کلومیٹر دور واقع ہے۔ اوستھی نے لکھنو میں پی ٹی آئی کو بتایا کہ مملکتی وزیر داخلہ اجئے مشرا کے لڑکے آشیش مشرا کے خلاف ایف آئی آر درج ہوچکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہائیکورٹ کے ریٹائرڈ جج‘ لکھم پور کھیر تشدد کی تحقیقات کریں گے۔ زخمیوں کو فی کس 10لاکھ روپئے دینے کا کسانوں کے ساتھ سمجھوتہ ہوگیا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.