مجھے یہاں سے لے جاؤ، کمسن پاکستانی دہشت گرد کی فریاد

علی بابا کو 26 ستمبر کو اُڑی سیکٹر میں انکاؤنٹر کے دوران پکڑا گیا تھا۔ اس نے جان بخش دینے کی گزارش کی تھی۔

سری نگر: جموں وکشمیر کے اُڑی سیکٹر میں زندہ پکڑے گئے پاکستانی دہشت گرد نے پڑوسی ملک میں اپنے آقاؤں سے اپیل کی ہے کہ وہ اسے اس کی ماں کے پاس واپس پہنچائیں۔

کمسن پاکستانی دہشت گرد علی بابا پاترا‘ ویڈیو پیام میں جسے ہندوستانی فوج نے چہارشنبہ کے دن سری نگر میں جاری کیا‘ کہا کہ لشکر طیبہ کے ایریا کمانڈر‘ آئی ایس آئی اور پاک فوج سے میری اپیل ہے کہ مجھے میری ماں تک واپس پہنچائیں جیسا کہ انہوں نے مجھے یہاں (انڈیا) بھیجا تھا۔

علی بابا کو 26 ستمبر کو اُڑی سیکٹر میں انکاؤنٹر کے دوران پکڑا گیا تھا۔ اس نے جان بخش دینے کی گزارش کی تھی۔ 18 ستمبر کو شروع ہونے والے 9 روزہ آپریشن میں دوسرا پاکستانی درانداز مارا گیا تھا۔

علی بابا نے ویڈیو پیام میں کہا کہ پاک فوج‘ آئی ایس آئی اور لشکر طیبہ‘ کشمیر کی صورتِ حال کے تعلق سے جھوٹ پھیلارہے ہیں۔

ہم سے کہا گیا تھا کہ ہندوستانی فوج خون خرابہ کررہی ہے لیکن سب کچھ پرامن ہے۔ میں اپنی ماں سے کہنا چاہوں گا کہ ہندوستانی فوج نے میرا اچھاخیال رکھا ہے۔

مجھے یہاں پانچوں وقت لاؤڈ اسپیکر پر اذان سنائی دیتی ہے۔ دہشت گردوں کی صف میں بھرتی ہونے کی تفصیل بیان کرتے ہوئے اس نے کہا کہ اس کا باپ 7 برس قبل گزر گیا۔

اس نے مالی مشکلات کے باعث اسکول چھوڑدیا اور سیالکوٹ کی گارمنٹ فیکٹری میں نوکری کرلی تھی جہاں اس کی ملاقات انس سے ہوئی تھی جو لشکر طیبہ میں بندے بھرتی کرتا تھا۔

خراب معاشی حالات کی وجہ سے میں اس کے ساتھ چلا گیا۔ اس نے مجھے 20 ہزار روپے دیئے اور بعد میں مزید 30 ہزار روپے دینے کا وعدہ کیا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.