ہندوستان کو 1947 میں آزادی نہیں بھیک ملی تھی: کنگنا رناوت

کنگنا رناوت کو ایک ویڈیو میں یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے ”وہ آزادی نہیں بلکہ بھیک تھی اور اصلی آزادی 2014 میں ملی ہے۔ رناوت جنہیں حال ہی میں پدم شری ایوارڈ دیا گیا ہے‘ بظاہر 2014 میں بی جے پی کے برسراقتدار آنے کا حوالہ دے رہی تھیں۔

نئی دہلی: اداکارہ کنگنا رناوت نے آج یہ کہتے ہوئے ایک طوفان کھڑا کردیا ہے کہ ہندوستان کو اصلی آزادی 2014 میں ملی جب مودی زیرقیادت حکومت برسراقتدار آئی اور 1947 میں تو اسے بھیک ملی تھی۔ فلم ”منی کرنیکا“ کی اداکارہ جو اپنے اشتعال انگیز تبصروں کے لئے شہرت رکھتی ہیں‘ ایک بار پھر موضوع بحث اورکئی سیاسی قائدین بشمول بی جے پی رکن پارلیمنٹ اور سوشل میڈیا صارفین کی تنقیدوں کا نشانہ بن گئیں‘ جنہوں نے چہارشنبہ کی شام ایک تقریب میں کئے گئے ان کے تبصرہ پر برہمی ظاہر کی۔

اسی دوران بی جے پی رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی نے اداکارہ کنگنا رناوت کے اس مبینہ تبصرہ پر کہ ہندوستان کو 1947 میں بھیک ملی تھی جبکہ 2014میں آزادی ملی ہے‘ انہیں نشانہ تنقید بنایا اور کہا کہ ان کی یہ حرکت ملک دشمن ہے اور اسے یہی کہا جانا چاہئے۔ رکن لوک سبھا نے کہا کہ لوگ ہماری تحریک آزادی کے دوران بے شمار قربانیوں‘ لاکھوں جانوں کے اتلاف اور خاندانوں کی تباہی کو فراموش نہیں کرسکتے اور اتنے شرمناک انداز میں اس کی اہمیت گھٹادیئے جانے کو محض ایک لاپرواہ یا بے دردانہ تبصرہ نہیں کہا جاسکتا۔ یہ ایک ملک دشمن حرکت ہے اور اسے یہی کہا جانا چاہئے۔ ایسا نہ کرنے سے ان تمام کے ساتھ غداری ہوگی جنہوں نے اپنا خون بہایا تھا تاکہ آج ہم بحیثیت قوم فخر اور آزادی کے ساتھ کھڑے ہوسکیں۔

 انہوں نے ایک نیوز چیانل کے پروگرام کے دوران کئے گئے رناوت کے اس تبصرہ کا مختصر کلپ بھی پوسٹ کیا جس میں رناوت کو ہندی میں یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے ”وہ آزادی نہیں بلکہ بھیک تھی اور اصلی آزادی 2014 میں ملی ہے۔ رناوت جنہیں حال ہی میں پدم شری ایوارڈ دیا گیا ہے‘ بظاہر 2014 میں بی جے پی کے برسراقتدار آنے کا حوالہ دے رہی تھیں۔ انہوں نے ماضی میں بھی اپنے دائیں بازو کے تبصروں اور اپوزیشن کے سیاسی قائدین کے خلاف بیانات سے تنازعہ پیدا کردیا تھا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.