ممبئی حملہ کے سلسلہ میں منیش تیواری نے منموہن حکومت پر تنقید کی

تیواری نے 2008 کے ممبئی حملہ کے سلسلے سابقہ منموہن حکومت پر نشانہ لگاتے ہوئے اپنی کتاب‘ٹین فلیش پوائنٹس 20 ایئرس’میں کہا ہے کہ ممبئی حملے کے بعد پاکستان کے خلاف سخت کارروائی کی ضرورت تھی لیکن ایسا نہیں کرنا ان کی حکومت کی کمزوری تھی۔

نئی دہلی: سابق وزیر خارجہ سلمان خورشید کی کتاب پر مچا سیاسی ہنگامہ ابھی تھما بھی نہیں ہے کہ کانگریس رہنما منیش تیواری کی ایک متنازعہ کتاب سامنے آگئی ہے جس میں انہوں نے (منیش تیواری)ڈاکٹر منموہن سنگھ کی قیادت والی سابق کانگریس حکومت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ ممبئی حملہ کے بعد پاکستان کے خلاف سخت کارروائی نہ کرنا حکومت کی کمزوری تھی۔

تیواری نے 2008 کے ممبئی حملہ کے سلسلے سابقہ منموہن حکومت پر نشانہ لگاتے ہوئے اپنی کتاب‘ٹین فلیش پوائنٹس 20 ایئرس’میں کہا ہے کہ ممبئی حملے کے بعد پاکستان کے خلاف سخت کارروائی کی ضرورت تھی لیکن ایسا نہیں کرنا ان کی حکومت کی کمزوری تھی۔انہوں نے آگے لکھا کہ ایک وقت آتا ہے جب کارروائی الفاظ سے زیادہ بڑتی ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ 26/11 وہ وقت تھا جب پاکستان کے خلاف سخت کارروائی ہونی چاہئے تھی اور اسے اس کی زبان میں جواب دیا جانا چاہئے تھا۔کانگریس لیڈر نے حملے کے مقابلے امریکہ کے 9/11 سے بھی کہ اور کہا کہ بھارت کو 26/11 کے بعد ویسی کارروائی کرنی چاہئے تھی جیسے امریکہ نے 9/11 کی طرح کی تھی۔

اس دوران بی جے پی ترجمان گورو بھاٹیہ نے کہا ہے کہ کانگریس حکومت نے قومی سلامتی پر بھی ہندوستان کی سالمیت کی فکر نہیں کی تھی۔ مسٹر تیواری نے اعتراف کیا ہے کہ ان کی حکومت نے قومی سلامتی کو داؤ پر لگایا تھا۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا اب کانگریس صدر سونیا گاندھی اور سابق صدر راہل گاندھی خاموشی توڑیں گے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.