ورچوئل کرنسیوں کے اشتہارات پر پابندی لگانے کا کوئی فیصلہ نہیں: سیتا رمن

سیتا رمن نے کہا کہ ریزرو بینک آف انڈیا اور سیبی کے ذریعے لوگوں میں بیداری لانے کی کوشش کی گئی ہے۔

نئی دہلی: وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے آج راجیہ سبھا میں کہا کہ ملک میں ورچوئل کرنسی (کریپٹو کرنسی) سے متعلق بل کابینہ کی منظوری کے بعد آئے گا، لیکن کرپٹو سے متعلق مختلف ذرائع پر آنے والے اشتہارات پر پابندی لگانے کا فیصلہ ابھی تک نہیں کیا گیاہے۔

وقفہ سوالات کے دوران ایوان میں ضمنی سوالات کے جواب میں محترمہ سیتا رمن نے کہا کہ یہ جوکھم بھرا ہے اور مکمل ریگولیٹری فریم ورک نہیں ہے۔ اس کے اشتہارات پر پابندی کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

سیتا رمن نے کہا کہ ریزرو بینک آف انڈیا اور سیبی کے ذریعے لوگوں میں بیداری لانے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ورچوئل کرنسیاں بھی ناپسندیدہ سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کر سکتی ہیں، اس لیے اس پر کڑی نظر رکھی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت اس کے لیے ایک بل لانے کی تیاری کر رہی ہے جس میں پرانے بل کے ساتھ نئی دفعات بھی ہوں گی۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ نان فنجیبل ٹوکن (این ایف ٹی) کے اصول پر بھی بات کی جائے گی۔ اس سلسلے میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے سشیل کمار مودی کی طرف سے پوچھے گئے ضمنی سوال پر انہوں نے کہا کہ این ایف ٹی کے اصول پر بھی بات کی جائے گی۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.