اساتذہ کو بذریعہ آن لائن ہوم ورک چیک کرنے کا مشورہ

محکمہ تعلیمات تلنگانہ نے کل اسٹانڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر (ایس او پی) جاری کئے ہیں جس میں خانگی اسکول انتظامیہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ فیس داخل نہ کرچکے طلبہ کو کمرہ جماعت سے نہ نکالیں۔

حیدرآباد: ریاست بھر میں تعلیمی اداروں کی کشادگی اور فزیکل کلاسس کی بحالی کے بعد چند اسکولوں کو کچھ دنوں کیلئے دوبارہ اس لئے بند کردیا گیا کہ ان اسکولوں کے چند طلبہ اور اساتذہ کورونا سے متاثر ہوئے ہیں۔

ان امور کو مدنظر رکھتے ہوئے محکمہ تعلیمات تلنگانہ نے کل اسٹانڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر (ایس او پی) جاری کئے ہیں جس میں خانگی اسکول انتظامیہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ فیس داخل نہ کرچکے طلبہ کو کمرہ جماعت سے نہ نکالیں۔

یونیفارمس اور نصابی کتب نہ ہونے کے باوجود طلبہ کو کلاسس میں بیٹھنے کی اجازت دی جانی چاہئے۔ ایک ہفتہ کی تاخیر سے اسکول آنے والے بچوں کو غیر حاضر تصور نہیں کرناچاہئے۔

ایس او پی میں اسکولی ہیڈ ماسٹرس اور اساتذہ پر زور دیا گیا ہے کہ وہ کمرہ جماعت میں طلبہ بالخصوص تعلیم میں کمزور بچوں پر توجہ مرکوز کریں اورآن لائن کے ذریعہ ہوم ورک چیک کریں۔

بچوں کو ایک ہفتہ تک آن لائن کلاسس میں شرکت کرنے کی اجازت دیں اس کے بعد سرپرستوں کو اس بات پر قائل کرائیں کہ وہ بچوں کو اسکول روانہ کریں۔

ایسے بچوں کیلئے جن کے والدین انہیں کورونا وائرس کے انفیکشن کے خدشہ سے اسکول روانہ نہیں کررہے ہیں، آن لائن کلاسس کی سہولت برقرار رکھیں۔

 آف لائن کلاسس سے غیر حاضر بچوں پر کسی قسم کا جرمانہ عائد نہیں کیا جانا چاہئے۔ عدالت کے احکام پر حکومت نے یہ ایس او پی جاری کئے ہیں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.