بنڈی سنجے کی پرجا سنگرام یاترا ناکام: جیون ریڈی

جیون ریڈی نے بنڈی سنجے اور صدرپردیش تلنگانہ کانگریس ریونت ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ ٹی آر ایس حکومت کے خلاف بیان بازی کے بجائے کانگریس اور بی جے پی کے برسر اقتدار ریاستوں میں کسانوں کیلئے فلاح وبہبود اسکیمات شروع کرنے کی درخواست کریں۔

حیدرآباد: آرمور کے ٹی آر ایس رکن اسمبلی اے جیون ریڈی نے صدر ریاستی بی جے پی تلنگانہ بنڈی سنجے کی پرجا سنگرام یاترا کو ناکام قرار دیا۔ اس یاترا میں دیگر اضلاع سے عوام کو لایا جارہا ہے۔ انہوں نے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ بنڈی سنجے کو مشورہ دیا کہ اگر وہ تلنگانہ کے عوام کے بہی خواہا ں ہیں تو انہیں ریاست کی ترقی کیلئے مرکزی حکومت سے نمائندگی کرکے کم از کم 20ہزار کروڑ روپئے لانا چاہیئے۔

 اے جیون ریڈی اور رکن کونسل اے ملیشم نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے شروع کردہ فلاحی اسکیمات کی مثال ملک کی کسی بھی ریاست میں نہیں ملتی۔ ریاستی حکومت‘ کسانوں کو مفت 24گھنٹے برقی سربراہ کر رہی ہے‘ حکومت نے رعیتو بندھو اور رعیتو بیمہ ودیگر اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔

 انہوں نے بنڈی سنجے اور صدرپردیش تلنگانہ کانگریس ریونت ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ ٹی آر ایس حکومت کے خلاف بیان بازی کے بجائے کانگریس اور بی جے پی کے برسر اقتدار ریاستوں میں کسانوں کیلئے فلاح وبہبود اسکیمات شروع کرنے کی درخواست کریں۔

 انہوں نے کہا کہ اے ریونت ریڈی کے صدر تلنگانہ کانگریس کمیٹی کے عہدہ پر فائم ہونے کے بعد کانگریس کے سینئر قائدین میں اختلافات پیدا ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح تلنگانہ میں تلگو دیشم پارٹی کا خاتمہ ہوگیا ہے اس طرح سال 2023کے اسمبلی انتخابات کے بعد کانگریس ہیڈ کوارٹر گاندھی بھون پر ٹولیٹ کا بورڈ آویزاں کیا جائے گا۔

 انہوں نے کہا کہ حلقہ اسمبلی حضور آباد کے ضمنی الیکشن میں بی جے پی امیدوار ای راجندر کو شکست ہوگی اور کانگریس کے امیدوار کو ضمانت بچانا بھی مشکل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں بلیک میل کی سیاست اور جھوٹے وعدے کرنے والوں کو یہاں کی عوام اچھی طرح جانتی ہے وہ ان کے گمراہ کن پروپگنڈہ کو نظر انداز کردیں گے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.