آخری قطرہ خون تک دلتوں کی ترقی کیلئے لڑتے رہیں گے:کے سی آر

چیف منسٹر نے کہاکہ کافی جدوجہد اورمشقت کے بعدتلنگانہ حاصل ہوااورگذشتہ 7سالوں کے دوران ہم نے بہترین اندازمیں ترقی کی۔کبھی وقت کی بربادی قراردیئے گئے پیشہ زراعت کو نفع بخش پیشہ میں تبدیل کردیا۔

حیدرآباد: چیف منسٹرکے چندرشیکھر راؤ نے کہا کہ وہ اپنے خون کے آخری قطرہ تک دلت طبقات کی جامع ترقی کیلئے لڑتے رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ جس طرح تحریک تلنگانہ کوکامیاب بنانے کیلئے جدوجہدکی گئی تھی ٹھیک اسی طرح دلت بندھواسکیم کی کامیابی کیلئے بھی جدوجہد کی جائے گی۔

کریم نگر کلکٹریٹ میں آج دلت بندھواسکیم پرغوروخوض کے لئے منعقدہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے سماج کودلت طبقات کی سماجی ومعاشی ترقی کو یقینی بنانے آگے آنے کامشورہ دیا۔

دلت طبقات کیساتھ جاری امتیازی رویہ کے خاتمہ کی ضرورت پرزوردیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی معلوم نہیں ہے کہ اس امتیازی رویہ کاآغاز کہاں سے اور کس نے کیا تھاتاہم یہ ایک گھناؤنا جرم ہے۔

انہوں نے کہا کہ مصمم ارادوں کے ذریعہ کچھ بھی حاصل کیا جاسکتا ہے۔جذبہ اورمصمم ارادوں کے ذریعہ بھی علحدہ ریاست تلنگانہ حاصل ہوا۔ اسی جذبہ سے تلنگانہ کوترقیافتہ اور خوشحال بنایا جائے گا۔

اسی جذبہ ولگن سے دلت طبقات کی ترقی و خوشحالی کوممکن بنایا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ تلنگانہ سماج کی انفرادیت رہی کہ وہ اپنے مقاصد‘حدف کومحنت اورجستجو کے ذریعہ حاصل کرکے ہی دم لیتے ہیں۔

چیف منسٹر نے کہاکہ کافی جدوجہد اورمشقت کے بعدتلنگانہ حاصل ہوااورگذشتہ 7سالوں کے دوران ہم نے بہترین اندازمیں ترقی کی۔کبھی وقت کی بربادی قراردیئے گئے پیشہ زراعت کو نفع بخش پیشہ میں تبدیل کردیا۔

برقی سربراہی میں تسلسل لایاگیا‘سالانہ تین کروڑ ٹن دھان کی پیدوار کے ذریعہ ملک میں سرکردہ مقام حاصل کیا۔ایک ایسی ریاست جہاں کے مکین دوسری ریاستوں کونقل مکانی کیا کرتے تھے‘ آج سارے ملک کیلئے مرکزتوجہ بنی ہوئی ہے۔

ریاست میں بامعنی اورخوشگوارتبدیلی رونماء ہورہی ہے۔آبائی پیشہ جوکبھی ختم ہونے کے قریب تھے‘کااحیاء کیاگیا اورکروڑہا روپے خرچ کرتے ہوئے ان پیشوں کومقبول عام اور نفع بخش بنایاجارہاہے‘ حکومت بی سی اور ایم بی سی طبقات کاہرممکنہ طریقہ سے ساتھ دے رہی ہے۔

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.