آروگیہ شری میں کورونا کاعلاج شامل کرنے کا فیصلہ

ذرائع کے مطابق ریاستی محکمہ میڈیکل اینڈ ہیلت وبہبودخاندان نے اس ضمن میں اندرون احکام جاری کئے ہیں۔ ابتدائی مرحلہ میں اس اسکیم کو سرکاری ہاسپٹلس تک محدودرکھاجائے گا۔

حیدرآباد: حکومت تلنگانہ نے ریاست کی آروگیہ شری اسکیم کومرکز کی بھارت آیوشمان اسکیم میں ضم کرتے ہوئے اس کے تحت کورونا‘سوائن فلواور دیگر امراض کے علاج کی سہولت فراہم کرنے کا اہم فیصلہ کیاہے۔

ذرائع کے مطابق ریاستی محکمہ میڈیکل اینڈ ہیلت وبہبودخاندان نے اس ضمن میں اندرون احکام جاری کئے ہیں۔ ابتدائی مرحلہ میں اس اسکیم کو سرکاری ہاسپٹلس تک محدودرکھاجائے گا۔

دیگر مراحل میں ان امراض کے علاج کی سہولت کو خانگی ہاسپٹلس تک وسعت دی جائے گی۔حکومت نے کورونا کے علاج کوجملہ 17اقسام میں تقسیم کیا ہے۔

دریں اثناء حکومت تلنگانہ ریاست میں بھارت آیوشمان اسکیم کو نافذکررہی ہے تاکہ آروگیہ شری کے تعاون سے آیوشمان بھارت اسکیم میں دستیاب کورونا علاج کی سہولت کو یقینی بنایاجائے۔

سردست یہ اسکیم‘ سرکاری ہاسپٹلوں تک محدود ہے۔حکومت‘ کوروناکے اہل مریض کے علاج کے اخراجات کی رقم راست متعلقہ سرکاری داوخانوں کومنتقل کرے گی۔

حکومت نے سوائن فلو کے بشمول وائرل کے تمام اقسام کے بخارکے میڈیسن کوبھی آروگیہ شری میں شامل کرنے کا اہم فیصلہ کیاہے۔

حکومت نے پیاکیج کی اساس پر کورونا سے آنے والی مختلف بیماریوں کے علاج فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔کریٹکل کیئر‘پلمونولوجی‘پڈیاٹرکس اور جنرل میڈیسن میں طبی خدمات دستیاب ہیں۔ آروگیہ شری اسکیم کے تحت 949امراض کا علاج کیا جارہا ہے۔

حکومت نے اس فہرست میں کورونا سے مربوط امراض اور سوائن فلو کوبھی شامل کیا ہے۔آروگیہ شری میں بچوں اوربڑھوں کے لئے کورونا کے علاج کی سہولت دستیاب رہے گی۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.