اسکالرشپس کی عدم اجرائی سے بیرون ملک میں اقلیتی طلبہ پریشان

بتایاجاتاہے کہ بیرونی ممالک میں زیرتعلیم ریاست کے اقلیتی طبقہ کو2019سے اسکالرشپس کی رقم وصول نہیں ہوئی ہے جس کے سبب والدین اپنے مکانات کورہن پر رکھ کر اس سے ملنے والی رقم، بچوں کوروانہ کررہے ہیں تاکہ وہ تعلیم مکمل کرسکیں۔

حیدرآباد: اوورسیز اسکالرشپس اسکیم (اوایس ایس)کے تحت فنڈس کی عدم اجرائی کے نتیجہ میں بیرونی ممالک میں تعلیم حاصل کرنے والے تلنگانہ کے اقلیتی طلبہ کومعاشی چیالنجس کاسامنا ہے۔

اوورسیز اسکالرشپس کی رقم جاری نہ کئے جانے کی وجہ سے ان طلبہ کواپنے والدین کی مالی امداد پرمجبورہوناپڑرہاہے۔

بتایاجاتاہے کہ بیرونی ممالک میں زیرتعلیم ریاست کے اقلیتی طبقہ کو2019سے اسکالرشپس کی رقم وصول نہیں ہوئی ہے جس کے سبب والدین اپنے مکانات کورہن پر رکھ کر اس سے ملنے والی رقم، بچوں کوروانہ کررہے ہیں تاکہ وہ تعلیم مکمل کرسکیں۔

متذکرہ اسکیم کے تحت ہر اقلیتی طالب علم کوجوبیرون ملک تعلم حاصل کررہاہے،20لاکھ روپے کی مالی امدافراہم کرنے کا ٹی آر ایس حکومت نے وعدہ کیاتھا۔تاہم رقومات کی عدم اجرائی سے بیرون ملک زیرتعلیم ان طلبہ کومشکلات کا سامنا ہے۔

ان طلبہ کاکہنا ہے کہ ماضی میں انہیں معاشی مسائل کاسامنانہیں تھا، وہ جزوقتی کام کرتے ہوئے تعلیمی مصارف کو برداشت کیاکرتے تھے لیکن کوروناوباء کی وجہ سے انہیں پارٹ ٹائم جابس بھی نہیں مل رہے ہیں جس کے سبب انہیں مالی مشکلات درپیش ہیں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.