بی جے پی کو دلتوں کے بارے میں بات کرنے کا حق نہیں: ایم نرسمہلو

انہوں نے کہا کہ 70 سالوں میں دلتوں کے ساتھ کبھی انصاف نہیں ہوا۔انہوں نے دعوی کیا کہ امبیڈکر کے نظریات کو نافذ کرنے والے لیڈرچیف منسٹر کے چندرشیکھرراو ہیں۔

حیدرآباد: ٹی آر ایس لیڈروسابق وزیر ایم نرسمہلو نے کہا ہے کہ بی جے پی لیڈروں کو دلتوں کے بارے میں بات کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ انہوں نے ٹی آر ایس پارٹی کے لیڈروں کے ساتھ تلنگانہ بھون میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے سوال کیا کہ کیا ملک کی 28 ریاستوں میں کہیں بھی دلت بندھو جیسی اسکیم ہے؟ انہوں نے کہا کہ وہ ایک دلت کے طور پر بی جے پی کے اقدامات کی مذمت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 70 سالوں میں دلتوں کے ساتھ کبھی انصاف نہیں ہوا۔انہوں نے دعوی کیا کہ امبیڈکر کے نظریات کو نافذ کرنے والے لیڈرچیف منسٹر کے چندرشیکھرراو ہیں۔

انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی پر یہ کہتے ہوئے بھی نکتہ چینی کی کہ مودی نے انتخابات سے پہلے ہر ایک کے اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپے جمع کروانے کا وعدہ کیا تھا تاہم وزیراعظم مودی نے اب تک ایک روپیہ بھی نہیں دیا ہے۔

انہوں نے مرکز پر تمام شعبوں کی نجی کاری اور بی جے پی حکومت پر پسماندہ افراد کو دھوکہ دینے کا الزام لگایا۔ انہوں نے واضح کیا کہ دھان کی خریداری کی ذمہ داری مرکزی حکومت کی ہے۔

انہوں نے نشاندہی کرتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ واحد ریاست ہے جو مفت بجلی، آبپاشی اور سرمایہ کاری کی امداد فراہم کرتی ہے۔ انہوں نے بی جے پی کو چیلنج کیا کہ اگر اس میں ہمت ہے تو پورے ملک میں دلت بند نافذ کرے۔

انہوں نے تلنگانہ کانگریس کے سربراہ ریونت ریڈی پر بھی نکتہ چینی کی اور کہا کہ حضور آباد ضمنی انتخاب میں ان کی پارٹی کے امیدوار کے 3000 ووٹ حاصل کرنے کے باوجود ریونت ریڈی بے شرمی سے پی سی سی کے سربراہ بنے ہوئے ہیں۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.