تلنگانہ میں اچانک سیلاب کے جوکھم کا الرٹ جاری

شہر حیدرآبادمیں آئندہ 3دنوں تک شدید بارش کی پیش قیاسی کے بعد جی ایچ ایم سی عہدیداروں کوانتہائی چوکسی کاحکم دیاگیا ہے۔

حیدرآباد: محکمہ موسمیات کے حیدرآبادمرکز نے ریاست تلنگانہ میں آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران فلاش فلڈرسک (اچانک سیلاب کے جوکھم)کاالرٹ جاری کیا ہے۔

محکمہ موسمیات نے پیش قیاسی کی ہے کہ آئندہ 24گھنٹوں میں اضلاع کتہ گوڑم‘ کھمم‘ عادل آباد‘بھونگیر‘آصف آباد‘ منچریال‘ نرمل‘پداپلی‘ورنگل‘کریم نگر‘سرسلہ‘ جئے شنکر بھوپال پلی‘ملگ‘جگتیال‘ محبوب آباد‘ جنگاؤں میں اوسط سے شدید بارش کاامکان ہے جس کے پیش نظران اضلاع میں اچانک سیلاب کاجوکھم کاامکان ظاہر کیاگیاہے۔

ٹیم کمانڈنٹ این ڈی آرایف سشان کمار بہیرہ نے بتایاکہ متذکرہ اضلاع میں اچانک سیلاب کاخطرہ بڑھ گیا ہے تاہم این ڈی آر ایف کی ٹیم صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار ہے۔ چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے آج ریاست کے عہدیداروں کوعوام کی جان ومال کاتحفظ کرنے کاحکم دیاہے۔

دہلی سے چیف سکریٹری سومیش کمار کے ساتھ چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعہ ریاست کے عہدیداروں سے شدید بارش سے پیداصورتحال کا جائزہ لیا۔

شدید بارش سے ریاست اور شہر میں عام زندگی معطل ہوگئی۔آئی اے این ایس کے مطابق ریاست تلنگانہ کے کئی مقامات بشمول شہر حیدرآبادمیں آج صبح سے موسلادھاربارش کاسلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے۔ سمندری طوفان گل آب جوکل رات آندھراپردیش۔

اڈیشہ کے ساحل سے ٹکرانے کے بعدکمزور پڑگیا کے زیراثرریاست کے کئی مقامات پر شدیدبارش ہورہی ہے۔ حیدرآباداور اس کے اطراف واکناف کے اضلاع اور ریاست کے دیگر حصوں میں پیرکی صبح سے شدید بارش ہورہی ہے۔محکمہ موسمیات کی جانب سے شدیدسے انتہائی شدید بارش کی وارننگ دینے کے بعدحکام کوہائی الرٹ کردیاگیا ہے۔

محکمہ موسمیات کے بلیٹن میں پیش قیاسی کی گئی ہے کہ اضلاع نرمل‘نظام آباد‘جگتیال‘ راجنا سرسلہ‘ محبوب آباد‘ورنگل رورل اور کاماریڈی میں کہیں کہیں شدید سے بہت شدید کے ساتھ انتہائی شدید بارش ہوگی۔عادل آباد‘کمرم بھیم آصف آباد‘منچریال‘کریم نگر‘پداپلی‘جئے شنکر بھوپال پلی‘ملگ‘بھدرادری کتہ گوڑم‘ ورنگل (اربن)‘جنگاؤں‘ یدادری بھونگیر‘ رنگاریڈی‘ حیدرآباد‘میڑچل ملکاجگری‘ سدی پیٹ‘ سنگاریڈی اور میدک اضلاع کے بعض مقامات میں انتہائی شدیدبارش کاامکان ہے۔

تلنگانہ کے کئی مقامات پرگرج چمک کیساتھ بارش کی پیش قیاسی کی گئی ہے اور 30 سے 40کیلومیٹرفی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چلنے کا بھی امکان ہے۔ شہر میں شدید بارش سے نشیبی علاقوں میں پانی داخل ہوگیا جبکہ کئی سڑکیں پانی سے زیر آب آگیں۔ٹریفک میں خلل پڑاجبکہ اضلاع میں زرعی کھیتوں میں پانی داخل ہونے سے کھڑی فصلوں کو نقصان پہونچا۔

برقی پولس اور کئی درخت گرپڑے جس کی وجہ سے برقی سربراہی اور آبرسانی نظام میں چندگھنٹوں تک خلل پڑا۔محکمہ موسمیات کے مرکز حیدرآبادکے انچارج ڈائرکٹر کے ناگارتنا نے بتایا کہ ہواکے کم دباؤ کا مرکز تلنگانہ پرمرکوز ہے جس کے زیر اثر آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران ریاست کے کئی حصوں میں انتہائی شدید بارش کاامکان ہے۔

شہر حیدرآبادمیں آئندہ 3دنوں تک شدید بارش کی پیش قیاسی کے بعد جی ایچ ایم سی عہدیداروں کوانتہائی چوکسی کاحکم دیاگیا ہے۔ ڈائرکٹر انفورسمنٹ ویجلینس اینڈڈیزاسٹر مینجمنٹ جی ایچ ایم سی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے شہریوں پرزوردیا کہ وہ غیر ضروری سفر سے گریز کریں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.