جنسی زیادتی کی شکار لڑکی کے خاندان کو مالی امداد کا تیقن : کے ٹی آر

بتایا جاتا ہے کہ ضلع راجنا سرسلہ میں حکمراں جماعت ٹی آر ایس کی خاتون سرپنچ کے شوہر، کمسن لڑکی کے ساتھ جنسی استحصال کے واقعہ میں ملوث ہے۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے وزیر انڈسٹری و آئی ٹی کے تارک راما راؤ نے چہارشنبہ کے روز جنسی زیادتی کا شکار کمسن قبائیلی لڑکی (6سالہ) کے خاندان کی ہر ممکن مدد کرنے کا تیقن دیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ ضلع راجنا سرسلہ میں حکمراں جماعت ٹی آر ایس کی خاتون سرپنچ کے شوہر، کمسن لڑکی کے ساتھ جنسی استحصال کے واقعہ میں ملوث ہے۔

راما راؤ نے جو ٹی آ رایس کے کارگذار صدر بھی ہیں، نے آج نیلو فر ہاسپٹل کا دورہ کیا جہاں یہ کمسن لڑکی زیر علاج ہے۔ انہوں نے متاثرہ کے والدین سے بھی بات چیت کی۔ انہوں نے کہا کہ ضلع سرسلہ میں پیش آئے اس گھناونے واقعہ سے انہیں گہرا صدمہ ہوا ہے اور کہا کہ وہ متاثرہ لڑکی کے خاندان کو انصاف دلانے کیلئے ہمیشہ ان کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔

کے ٹی آر نے نیلو فر چلڈرنس ہاسپٹل کے ڈاکٹروں کو لڑکی کا بہترسے بہتر علاج کرنے کی ہدایت دی ہے۔ کمسن قبائلی لڑکی کو جس نے پیٹ میں شدید درد کی شکایت کی تھی، نیلوفر ہاسپٹل لائے جانے کے ایک دن بعد وزیر کے ٹی آر نے ہاسپٹل کا دورہ کیا۔

تلنگانہ گریجنا سنگم کے احتجاج کے بعد لڑکی کو ہاسپٹل میں شریک کرایا گیا قبل ازیں والدین نے اپنی بیٹی کو ہاسپٹل میں شریک کرانے کیلئے 6گھنٹوں تک انتظار کیا۔ بی جے پی کے ریاستی صدر بنڈی سنجے نے بھی منگل کے روز ہاسپٹل کادورہ کیا اور انہیں اس واقعہ پر خاموشی اختیار کرنے پر کے ٹی آر کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.