تلنگانہ میں اسکولوں کی کشادگی، صرف چالیس فیصد طلبہ حاضر

تقریباً دیڑھ سال کے طویل عرصہ کے بعد آج سے اسکولس کو دوبارہ کھولدیا گیا۔ تاہم سخت کووڈ پروٹوکول کے درمیان فزیکل کلاسس منعقد کرنے کی متعلقہ اسکولس انتظامیہ کی ذمہ داری رہے گی۔

حیدرآباد: ریاست بھر میں آج سخت کووڈ پروٹو کول کے درمیان اسکولس کی کشادگی عمل میں لائی گئی ہے۔ کورونا وائرس کی وبا سے تلنگانہ میں مارچ 2020 سے اسکول بند تھے۔

تقریباً دیڑھ سال کے طویل عرصہ کے بعد آج سے اسکولس کو دوبارہ کھولدیا گیا۔ تاہم سخت کووڈ پروٹوکول کے درمیان فزیکل کلاسس منعقد کرنے کی متعلقہ اسکولس انتظامیہ کی ذمہ داری رہے گی۔

شہر کے چند اسکولوں میں اولیائے طلبہ اور ٹیچرس کے اجلاس بھی منعقد کئے گئے۔ پرجوش طلبہ کو جوماسک پہننے ہوئے تھے متعلقہ اسکول جاتے ہوئے دیکھا گیا۔ کلاسس کے آغاز سے طلبہ انتہائی خوش دیکھے گئے۔ وہ، ایک نئے جوش وخروش کے ساتھ دیڑھ سال بعد اسکول روانہ ہوئے۔ کئی طلبہ اپنے ہم کلاسس ساتھیوں سے ملنے کیلئے پر جوش دکھائی دے رہے تھے۔

اس دوران ایسے طلبہ کو جو اسکول آنا نہیں چاہتے، وہ آن لائن کلاسس سے بدستور استفادہ کرپائیں گے۔ کئی اسکولوں میں طلبہ کا پر جوش خیر مقدم کیا گیا۔ اسکولوں کے اطراف واکناف علاقوں میں تقریباً18ماہ کے بعد یونیفارمس میں ملبوس بچے جو اپنے چہروں پر ماسک لگائے ہوئے تھے، دکھائی دئیے۔ چند ایسے بھی طلبہ ہیں جو صرف صورتحال کا جائزہ لینے اسکول پہنچے تھے۔

وہ مزید ایک ہفتہ آن کلاسس سے استفادہ کرئیں گے اس کے بعد ممکن ہے کہ مزید طلبہ آف لائن کلاسس میں شرکت کریں گے۔ ریاستی وزیر تعلیم سبیتا اندرا ریڈی نے چہارشنبہ کو وجئے نگر کالونی کے ایک سرکاری اسکول کا دورہ کرتے ہوئے حالات کا جائزہ لیا۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ریاست بھر میں آج 40 فیصد طلبہ اسکولس میں حاضر پائے گئے۔ سبیتا اندرا ریڈی نے کہا کہ اسکولس میں سانی ٹیشن کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر اولیائے طلبہ اپنے بچوں کو اسکولس بھیجنا چاہتے ہیں اپنے بچوں کو کووڈ19 پروٹوکول پر سختی کے ساتھ عمل کرانا ہوگا۔ انہوں نے اسکولوں میں اسمبلی کے وقت احتیاطی تدابیر احتیار کرنے کی ہدایت دی۔

وزیر تعلیم نے کہا کہ جملہ 60 لاکھ طلبہ میں 20 لاکھ طلبہ سرکاری اسکولوں میں زیر تعلیم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال پہلی کلاس میں ایک لاکھ اضافی طلبہ شامل ہوئے ہیں۔ سرکاری اسکولوں میں 2.50 لاکھ طلبہ کے نئے داخلوں کی اطلاعات ہیں۔ انہوں نے تیقن دیا کہ اسکولوں میں بچوں کا بھر پور خیال رکھا جائے گا۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.