سی ٹی روی نے مجلس کو کرناٹک کے طالبان قرار دیا

سی ٹی روی کا کہنا ہے کہ مجلس کرناٹک کے طالبان کی طرح ہے۔ اس پر اویسی نے بی جے پی لیڈر پر طاقتور پلٹ وار کیا۔ اویسی نے سی ٹی روی کو ابھی بچہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا بیان بچکانہ ہے۔

بنگلورو: بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری سی ٹی روی نے اسد الدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم کو طالبان قرار دیا ہے۔

سی ٹی روی کا کہنا ہے کہ مجلس کرناٹک کے طالبان کی طرح ہے۔ اس پر اویسی نے بی جے پی لیڈر پر طاقتور پلٹ وار کیا۔ اویسی نے سی ٹی روی کو ابھی بچہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا بیان بچکانہ ہے۔

وہ بین الاقوامی سیاست کے بارے میں کچھ نہیں جانتے ہیں۔ کلبرگی بلدیہ کے انتخابات سے متعلق سوال پر بی جے پی لیڈر سی سی ٹی روی نے کہا تھا کہ طالبان، مجلس، اور ایس ڈی پی آئی کے مدعے یکساں ہیں۔

کلبرگی میں طالبان کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ بی جے پی لیڈر کے اس بیان پر اویسی نے کہا کہ سی ٹی روی ابھی بچے ہیں۔ ان کو بین الاقوامی سیاست کے بارے میں کوئی معلومات نہیں ہیں۔

اویسی نے سوال کیا کہ کیا بی جے پی غیرقانونی سرگرمیاں (روک تھام) قانون (یو اے پی اے) کے تحت طالبان پر امتناع عائد کرے گی؟ واضح رہے کہ کورونا وباء کے سب کلبرگی میں کئی بار بلدی انتخابات ملتوی کیے جاچکے ہیں۔

اب یہ الیکشن 3ستمبر کو ہوگا اور 6/ ستمبر کو اس کے نتائج کا اعلان ہوگا۔ کلبرگی، ہبالی۔دھارواڑ اور بیلگاوی میں ہونے والے انتخابات کرناٹک کی نئی بسواراج بومئی حکومت کے لیے سخت امتحان ہیں۔ بی جے پی پہلی باربومئی حکومت کی قیادت میں یہ الیکشن لڑرہی ہے۔ مانا جارہا ہے کہ ان تینوں ہی مقامات پر بی جے پی اور کانگریس کے درمیان راست ٹکر ہوگی۔

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.