علیحدہ تلنگانہ کاقیام عوام کی ناقابل فراموش جدوجہد کانتیجہ : کے ٹی آر

کے ٹی آر نے کہاکہ کے سی آر پر بی جے پی‘کانگریس کی تنقیدکا اینٹ کا جواب پتھر سے دینے کے عزم کا اظہار کیا۔ ٹی آرایس نے 7سالہ دور اقتدار میں جو ترقیاتی کام انجام دیئے ہیں وہ کانگریس اور تلگودیشم کے 65 سالہ دور اقتدارمیں نہیں دیئے گئے ہیں۔

کاماریڈی: وزیر انفارمیشن اورٹکنالوجی وکارگذار صدر ٹی آرایس کے ٹی راماراؤ نے بی بی پیٹ ضلع کاماریڈی میں 6کروڑ50لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کئے گئے گورنمنٹ ہائی اسکول کی عمارت کاافتتاح کیا۔اس عمارت کی تعمیر نو کیلئے سبھاش ریڈی نامی شخص نے 6کروڑ 50لاکھ روپے خرچ کئے ہیں۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کے ٹی آر نے کہاکہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کاقیام عمل میں لانے کا سہرا چیف کے چندرشیکھرراؤ کے سرجاتا ہے۔

 ٹی آرایس نے 7سالہ دور اقتدار میں جو ترقیاتی کام انجام دیئے ہیں وہ کانگریس اور تلگودیشم کے  65سالہ دور اقتدارمیں انجام نہیں دیئے گئے ہیں۔پڑوسی ریاست تلنگانہ کی طرز حکمرانی کی خواہشمند ہیں۔ کے ٹی راما راؤنے کاماریڈی میں پارٹی کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ عوام سے خواہش کی ہے کہ وہ بی جے پی‘ کانگریس کے گمراہ کن پروپگنڈہ کا شکار نہ ہوں بلکہ ٹی آرایس کی مختلف شعبوں میں کی گئی ترقیاتی کاموں کامشاہدہ کریں۔

انہوں نے علحدہ ریاست تلنگانہ کے بانی چندرشیکھر راؤ پر بی جے پی‘کانگریس کی تنقیدکا اینٹ کا جواب پتھر سے دینے کے عزم کا اظہار کیا۔ انہوں نے یاددہانی کی کہ آنجہانی چیف منسٹر چناریڈی کے دورمیں علحدہ ریاست تلنگانہ کی تحریک شروع کی گئی تھی لیکن علحدہ ریاست تلنگانہ کا قیام عمل میں نہیں آسکا لیکن چندر شیکھر راؤ نے تحریک کاآغاز کیا اور مرن برت احتجاج کاتلنگانہ عوام کی ناقابل فراموش جدوجہد کے بعد علحدہ ریاست تلنگانہ کا قیام عمل میں آگیا۔

تحریک کے آغاز کے ساتھ ہی کاماریڈی کوضلع بنانے کا تیقن دیا گیا جسے پورا کیاگیا صرف 10 اضلاع تھے اضافہ کرکے 33 اضلاع بنائے گئے۔ 3400 گرام پنچاتیں قائم کی گئیں۔اس موقع پر ریاستی وزیر پرشانت ریڈی‘گمپاگوردھن‘ ہنمنت شنڈے‘سریندر (ارکان اسمبلی) بی بی پاٹل ایم پی‘ایم کے مجیب الدین‘ونوگوپال راؤ‘ جھانوی میونسپل چیرمین ودیگر موجودتھے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.