مجھ پر حملہ کی سازش: ای راجندر

انہوں نے کہا کہ 2023 میں وہ نہیں بلکہ ٹی آر ایس کا وجود ختم ہوجائے گا۔

حیدرآباد: بی جے پی قائد و سابق ریاستی وزیر ای راجندر نے خدشہ ظاہر کیا کہ ان پر حملہ کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

آج یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزراء کی جانب سے کہا جارہا ہے کہ میں 13 یا14/ اکتوبر کو خود پر حملہ کروائیں گے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مجھ پر حملہ کی سازش رچی جارہی ہے۔

چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے دروغ گوئی ترک کر تے ہوئے دلت طبقات کیساتھ کئے گئے وعدے کے مطابق دس، دس لاکھ روپے فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ای راجندر نے کہا کہ ٹی آرایس حکومت اوچھی حرکتوں پر اتر آئی ہے۔

ا ن کے نام سے فرضی مکتوب تحریر کرواتے ہوئے دلت طبقات میں بے چینی پھیلا نے کی کوشش کی مذمت کرتے ہوئے بی جے پی قائدنے کہا کہ ہر طبقہ کے غریب افراد میں دس لاکھ روپے کی تقسیم کا مطالبہ شائد حکومت کو ناگوار گذرا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 2023 میں وہ نہیں بلکہ ٹی آر ایس کا وجود ختم ہوجائے گا۔

این ایس ایس کے بموجب سابق وزیر وبی جے پی قائد ایٹالہ راجندر نے آج وعدہ کیا کہ حلقہ اسمبلی حضورآبادکے ضمنی الیکشن میں اگر حکمراں جماعت ٹی آرایس کامیاب ہوتی ہے تو وہ سیاست سے کنارا کشی اختیارکرلیں گے۔

ای راجندر نے اپنی پرجا دیونایاترا کے دوران وینا وینکامنڈل کے موضع کورکل میں حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے یہ ریمارکس کئے۔انہوں نے کہاکہ عوام ٹی آرایس حکومت سے عاجز آچکے ہیں اور عوام اس حکومت سے نجات پانے کیلئے بے چین ہیں۔

حضورآباد‘ ریاستی وزراکیلئے ایک سیلاب ثابت ہوگا۔بی جے پی قائد نے الزام عائد کیا کہ ٹی آرایس کے ارکان اسمبلی مواضعات میں کئی مکانات کوکرایہ پرحاصل کرتے ہوئے ان مواضعات کوبارس میں تبدیل کردیا ہے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.