مودی حکومت، بیچو انڈیا پروگرام میں مصروف: کے ٹی آر

انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ڈیجیٹل انڈیا، اسکل انڈیا، میک ان انڈیا کا آغاز کیا گیا تھا۔ اب مودی حکومت بیچو انڈیا پروگرام شروع کررہی ہے۔

حیدرآباد۔: حکمراں جماعت ٹی آر ایس کے کا رگذار صدر و ریاستی وزیر بلدی نظم ونسق کے تارک راما راؤ نے صدر ریاستی بی جے پی بنڈی سنجے کی پرجا یاترا پر برہمی کااظہار کیا۔

بنڈی سنجے سے پوچھا کہ آیا وہ اپنی یاترا کے دوران مرکزکی بی جے پی حکومت کی جانب سے عوامی شعبوں کو فروخت کرنے، عوام مخالف پالیسیوں کے بارے میں عوام کو واقف کروائیں گے؟

انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ڈیجیٹل انڈیا، اسکل انڈیا، میک ان انڈیا کا آغاز کیا گیا تھا۔ اب مودی حکومت بیچو انڈیا پروگرام شروع کررہی ہے۔

اس پروگرام کے تحت ملک کے 6لاکھ کروڑ روپے کے عوامی اثاثہ جات فروخت کئے جارہے ہیں جس میں مولا علی میں ریلوے کی 21ایکراراضی بھی شامل ہے۔

کے ٹی آر نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کے مختلف محکموں میں تقریباً8لاکھ جائیدادیں مخلوعہ ہیں۔

انہوں نے سوال کیا کہ آیا بی جے پی قائدین مرکزی حکومت سے ان مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کرنے کا مطالبہ کریں گے؟

انہوں نے صدر پردیش کانگریس تلنگانہ ریونت ریڈی کو سابق چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو کا مہرہ قرار دیااور کہا کہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ2 ستمبر کو دہلی میں پارٹی دفتر کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔

اس تقریب میں ریاستی وزراء، ارکان پارلیمنٹ، ارکان اسمبلی، ارکان کونسل اور پارٹی قائدین شرکت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ریاست میں 2 تا12 ستمبر پارٹی کی ولیج اور وارڈکمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی۔

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.