واسالامری میں کشیدگی۔ دلتوں کا حکام اور سرپنچ کے ساتھ جھگڑا

دلتوں نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقہ سے 50سال پہلے نقل مکانی کرنے والے خاندانوں کے لئے کس طرح اس اسکیم پر عمل کیاجاسکتا ہے جو اس گاوں کے دلت نہیں ہیں

حیدرآباد: یادادری ضلع کے واسالا مری گاوں میں کشیدگی دیکھی گئی۔چیف منسٹر کے چندرشیکھرراو نے اس گاوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

دلتوں کے ساتھ منعقدہ اجلاس میں ایس سی کارپوریشن کے عہدیداروں اورسرپنچ کے ساتھ بعض دلتوں کا جھگڑاہوگیا۔ان دلتوں نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقہ سے 50سال پہلے نقل مکانی کرنے والے خاندانوں کے لئے کس طرح اس اسکیم پر عمل کیاجاسکتا ہے جو اس گاوں کے دلت نہیں ہیں

۔دلت بندھو اسکیم جس کے تحت ہر دلت خاندان کے بینک کھاتہ میں دس لاکھ روپئے حکومت کی جانب سے جمع کروائے جارہے ہیں کے لئے اس گاوں کے 76افراد اہل قراردیئے گئے ہیں تاہم 66کے بینک کھاتوں میں یہ رقم منتقل کی گئی ہے۔

بقیہ دس افراد کو اس اسکیم کے تحت رقم کے فوائد حاصل نہیں ہوئے ہیں۔اس موقع پر دلتوں نے الزام لگایا کہ بعض افراد جنہوں نے اس گاوں سے تقریبا 50سال پہلے حیدرآباد نقل مکانی کی تھی کو اس اسکیم کے فوائد پہنچائے جارہے ہیں تاہم عہدیداروں نے کہاکہ قواعد کے مطابق وہ کام کررہے ہیں۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.