ٹی آر ایس میں ہائی کمانڈ نہیں، عوام ہی پارٹی کے مالک : کے سی آر

اتفاق رائے سے پارٹی کے دوبارہ صدر منتخب ہونے کے بعد کے سی آر نے شہر کے ہائی ٹیکس کنونشن سنٹر میں منعقدہ ٹی آر ایس پلینری سیشن کے مندوبین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کے فعال طاقتور 65لاکھ ممبرس ہیں۔

حیدرآباد۔25: چیف منسٹر و ٹی آر ایس کے سربراہ کے چندرشیکھر راؤ نے پیر کے روز کہا کہ پارٹی کے 425کروڑ روپئے بینک میں ڈپازٹ ہیں اس رقم سے ہر ماہ 2کروڑ روپئے کا سود حاصل ہوتا ہے۔

ٹی آر ایس کی داغ بیل 27اکتوبر 2001میں ڈالی گئی تھی۔ پارٹی کے ارکان تعداد 65لاکھ ہے ان میں وزراء‘ ارکان پارلیمنٹ‘ اسمبلی‘ کونسل اور دیگرشامل ہیں۔

اتفاق رائے سے پارٹی کے دوبارہ صدر منتخب ہونے کے بعد کے سی آر نے شہر کے ہائی ٹیکس کنونشن سنٹر میں منعقدہ ٹی آر ایس پلینری سیشن کے مندوبین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کے فعال طاقتور 65لاکھ ممبرس ہیں۔ پارٹی کارکنوں کیلئے تربیتی کلاسس کا اہتمام کرتے ہوئے ٹی آر ایس کو مزید مضبوط بنایا جارہا ہے۔

ریاست کے 33کے منجملہ 31اضلاع میں پارٹی دفاترکی عمارتیں تعمیر کی گئی ہیں اور یہ تمام دفاتر‘ افتتاح کے مراحل میں ہیں۔ حیدرآباد اور نیا ضلع ورنگل میں بھی بہت جلد پارٹی دفاتر تعمیر کئے جائیں گے۔ ان دونوں مقامات پر اراضی کی نشاندہی کا عمل جاری ہے۔ دوسرے مرحلہ میں تمام اسمبلی حلقوں میں پارٹی دفاتر تعمیر کئے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کانگریس اور بی جے پی کی طرح ٹی آر ایس میں کوئی مالکان نہیں ہیں اور ہماری پارٹی میں ”ہائی کمانڈ“ بھی نہیں ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ تلنگانہ عوام ہی پارٹی کے مالکان ہیں اور ہماری پارٹی کا ایجنڈہ‘ عوامی ایجنڈہ رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس پارٹی معاشی طورپر مضبوط ہے پارٹی کارکنوں کے انشورنس کیلئے 20کروڑ روپئے ادا کرر ہی ہے۔

قبل ازیں تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندرشیکھرراو، مسلسل نویں مرتبہ ٹی آرایس کے صدر منتخب قراردیئے گئے۔ٹی آرایس کے الیکشن ریٹرننگ آفیسر و ٹی آرایس کے جنرل سکریٹری سرینواس ریڈی ایم ایل سی نے شہر کے ہائی ٹیکس میں منعقدہ پارٹی کے پلینری سیشن میں چندرشیکھرراو کے بلامقابلہ پارٹی کے صدرکے طورپر منتخب ہونے کا اعلان کیا۔

ٹی آرایس کے بیشتر پارٹی لیڈروں نے 18پرچہ نامزدگیاں چندرشیکھرراو کی حمایت میں داخل کی تھیں۔پارٹی کے کسی اور لیڈر نے اس عہدہ کے لئے پرچہ نامزدگی داخل نہیں کیا۔اس پلینری سیشن میں ایک قرارداد منظور کرتے ہوئے پارٹی کا صدر منتخب ہونے پر چندرشیکھرراو کو مبارکباد پیش کی گئی۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.