کے سی آر نے انتخابی وعدوں کو فراموش کردیا: سمرتی ایرانی

مرکزی وزیر سمرتی ایرانی نے کہا کہ مجلس کے سربراہ کے مشوروں پر کے سی آر عمل کرتے ہیں۔مجلس کے دباؤ پر ٹی آر ایس حکومت نے 17 ستمبر کو سرکاری سطح پر یوم نجات نہیں منایا۔

حیدرآباد: مرکزی وزیر سمرتی ایرانی نے دعویٰ کیا کہ وزیر اعظم نریندرمودی‘ملک کے 80کروڑ افراد کو مفت راشن دے چکے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ ان کی حکومت کورونا وائرس کی وباء کے دوران خواتین میں رقم بھی تقسیم کرچکی ہے۔

ٹی آرایس کی زیرقیادت ریاستی حکومت کو شدید تنقیدکانشانہ بناتے ہوئے انہوں نے الزام عائد کیا کہ ریاستی حکومت نے مخلوعہ جائیدادو ں پرتقررات کے وعدہ کوپورا نہیں کیا ہے۔

ریاستی صدربی جے پی بنڈی سنجے کمار کے پہلے مرحلہ کی پدیاترا کے اختتام پر حسنا آباد میں منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے سمرتی ایرانی نے یہ بات کہی۔

یہ یاترا 36 دنوں پرمشتمل تھی جس کا کل حلقہ اسمبلی حسنا آبادمیں اختتام عمل میں آیا۔مرکزی وزیر نے چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ سے سوال کیا کہ بیروزگار نوجوانوں کو ہرماہ فی کس 3 ہزار روپے الاؤنس دینے کے وعدہ کو کیوں فراموش کردیا اور کہاکہ ٹی آرایس ہمیشہ اپنی حلیف جماعت ایم آئی ایم سے خائف رہتی ہے۔

مجلس کے سربراہ کے مشوروں پر کے سی آر عمل کرتے ہیں۔مجلس کے دباؤ پر ٹی آر ایس حکومت نے 17 ستمبر کو سرکاری سطح پر یوم نجات نہیں منایا۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ مرکزی حکومت‘پی ایم یوجنااسکیم کے تحت ریاست کومالی امداد فراہم کررہی ہے۔

پی ٹی آئی کے مطابق سمرتی ایرانی نے بحیثیت مہمان خصوصی عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے یادلایا کہ پانی‘ترقی کے لئے فنڈس اورنوکریوں کے مطالبہ پر علحدہ ریاست تلنگانہ کے حصول کے لئے جدوجہد کی گئی تاہم نئی ریاست کی تشکیل کے بعد عوام کومایوسی کے سواکچھ ہاتھ نہیں آیا۔

ٹی آرایس حکومت وعدہ کے مطابق غریبوں میں امکنہ‘دلتوں میں اراضیات تقسیم کرنے میں ناکام رہی ہے جبکہ مودی حکومت نے پی ایم آواز یوجنا کے تحت ملک بھرمیں غریبوں کے لئے 2کروڑگھرتعمیرکرائے ہیں۔ایرانی نے این ڈی اے حکومت کی اسکیمات آیوشمان بھارت‘ فصل بیمہ اوردیگر کاتذکرہ کیا۔بنڈی سنجے نے اپنی تقریر میں کہاکہ بی جے پی 80فیصد ہندؤں کے لئے کام کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ ہندوسماج کواس بات پرغور کرنا چاہئے کہ اگر بی جے پی ان کے مسائل پربات نہیں کرے گی توتلنگانہ میں ان کیلئے حالات کس قدر خراب ہوسکتے ہیں۔انہوں نے حاضرین سے سوال کیا کہ آپ بتائیں کہ تلنگانہ میں کون ساراج چاہتے ہیں۔رام راج‘طالبان راج یارضاکارراج چاہتے۔اس میں سے کونسا راج چاہیئے اس کافیصلہ ہندو سماج کوکرناہوگا۔

انہوں نے کہاکہ ضمنی الیکشن کے بعدوہ اپنی پدیاترا کادوبارہ آغاز کریں گے۔واضح رہے بنڈی سنجے کمار نے 28 اگست کو چارمینار کے دامن میں واقع بھاگیہ لکشمی مندرسے اپنی پدیاتراکاآغاز کیاتھا۔ جلسہ میں پارٹی قائدین ڈاکٹر کے لکشمن‘ ای راجندر اور دیگر شریک تھے۔

ذریعہ
این ایس ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.