کے کویتا نے حلقہ کونسل نظام آباد سے پرچہ نامزدگی داخل کیا

صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کونسل کیلئے انہیں مسلسل دوسری بار موقع فراہم کرنے کے لئے ٹی آرایس پارٹی سربراہ کے چندرشیکھرراؤ اورپارٹی قائدین کا شکریہ ادا کیا۔

حیدرآباد: رکن قانون سازکونسل نظام آباد کے کویتا نے آج مجالس مقامی حلقہ کونسل نظام آباد سے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔آج کویتانے عوامی نمائندوں‘ٹی آرایس قائدین‘کارکنوں کی بڑی تعدادکے ہمراہ دفتر کلکٹریٹ پہنچ کر ریٹرنگ آفیسر وضلع کلکٹرنظام آباد سی نارائن ریڈی کوپرچہ نامزدگی حوالہ کیا۔

بعدازاں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کونسل کیلئے انہیں مسلسل دوسری بار موقع فراہم کرنے کے لئے ٹی آرایس پارٹی سربراہ کے چندرشیکھرراؤ اورپارٹی قائدین کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے کہاکہ گذشتہ بارعوامی نمائندوں نے انہیں زبردست اکثریت سے کامیاب کیاتھا۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ ایک سال کے دوران چیف منسٹرکے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں مجالس مقامی اداروں کو مستحکم کرنے کیلئے عوامی نمائندوں کی ترقی وخوشحالی کیلئے بے شمار اقدامات کئے گئے۔

انہوں نے مزیدکہاکہ متحدہ ضلع نظام آباد میں ٹی آرایس کے اراکین اسمبلی ہیں۔مجالس مقامی اداروں میں تقریباً 90 فیصد اراکین کا تعلق ٹی آرایس سے ہے۔انہوں نے عوامی نمائندوں سے دوبارہ ان کی تائید کرنے کی اپیل کی۔

دوسری طرف کویتا کو ٹی آر ایس کاامیدوار بنائے جانے سے متحدہ ضلع نظام آباد کے تمام اسمبلی حلقوں میں تہوہار کا ماحول دیکھا جارہاہے۔آج صبح کویتا پر چہ نامزدگی داخل کرنے کیلئے حیدرآباد سے نظام آباد پہنچی۔ کاماریڈی میں ٹیکریال کے قریب ٹی آرایس قائدین اور کارکنوں نے کویتا کا والہانہ استقبال کیا۔

کویتاکا استقبال کرنے والوں میں خواتین کی بڑی تعداد موجود تھی۔ بڑے پیمانے پر آتش بازی کی گئی۔اسی طرح اندل مرای‘ڈچپلی اورنظام آباد پہنچنے پرکویتاکا زبردست استقبال کیاگیا۔جگہ جگہ فلکسیز لگائے گئے کویتا کے قافلہ پرپھول نچھاور کئے گئے۔

اس موقع پرریاستی وزیر پرشانت ریڈی‘صدرنشین آرٹی سی باجی ریڈی گوردھن‘رکن پارلیمنٹ بی بی پاٹل‘ صدر نشین ضلع پریشد نظام آباد ڈی وٹھل‘صدر نشین ضلع پریشد کاماریڈی دفعدار شوبھا‘ اراکین اسمبلی شکیل عامر‘بی گنیش گپتا‘ جیون ریڈی‘گمپاگوردھن‘ مئیر نظام آباد نیتوکرن‘ صدر ٹی آرایس اقلیتی سل نوید اقبال‘اقلیتی قائد طارق انصاری کے علاوہ ایم پی ٹی سیز‘ زیڈپی ٹی سیز‘ٹی آرایس قائدین موجودتھے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.