تلنگانہ میں آبادی پر کنٹرول کا قانون بنانے کا وعدہ : بنڈی سنجے

تلنگانہ بی جے پی صدر بنڈی سنجے نے الزام عائد کیا کہ ایم آئی ایم (مجلس) کی خواہش پر کے چندر شیکھر راؤ مسلم ریزرویشن کے کوٹہ میں اضافہ کی کوشش کررہے ہیں۔ ہم اس پر خاموش نہیں بیٹھیں گے۔ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے۔

حیدرآباد:  تلنگانہ بی جے پی صدر بنڈی سنجے کمار نے وعدہ کیا کہ ریاست میں برسر اقتدار آنے پر ان کی پارٹی آبادی پر کنٹرول کا قانون بنائے گی اور یہ مجوزہ قانون، اتر پردیش کے قانون کے طرز پر رہے گا۔

پرجا سنگرام یاترا کے حصہ کے طور پر سنگاریڈی میں منعقد ہ ایک عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے بنڈی سنجے نے کہا کہ بحیثیت صدر ریاستی بی جے پی وہ اس بات کا اعلان کرتے ہیں کہ 2023 میں بی جے پی تلنگانہ میں حکومت تشکیل دے گی اور ہم آبادی پر کنٹرول کا قانون لائیں گے۔

سنجے، جو کریم نگر کے رکن پارلیمان بھی ہیں، نے کہا کہ بی جے پی کی پالیسی ہے کہ ایک بچہ آئیڈیل ہے جبکہ زیادہ بچوں کی حد2 ہونی چاہئے۔ اتر پردیش میں بہت جلد قانون بنایا جائے گا تاکہ دوے سے زائد بچوں کے حامل افراد کومقامی الیکشن لڑنے سے روکنا ہے۔

حکمراں جماعت ٹی آر ایس کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس حکومت مذہب کی بنیاد پر تحفظات کو روبعمل لارہی ہے اس اقدام سے کمزور طبقات کے ساتھ شدید ناانصافی ہوگی۔

انہوں نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کو چیلنج کیا کہ وہ مسلم تحفظات کے کوٹہ میں اضافہ کرکے دکھائیں۔

 ایم آئی ایم (مجلس) کی خواہش پر کے چندر شیکھر راؤ مسلم ریزرویشن کے کوٹہ میں اضافہ کی کوشش کررہے ہیں۔ ہم اس پر خاموش نہیں بیٹھیں گے۔ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے۔

بنڈی سنجے نے 28 / اگست کو چار مینار کے دامن میں واقع مندر سے اپنی پرجاسنگرام یاترا کا آغاز کیا تھا۔ یہ یاترا2/ اکتوبر تک 550 کیلو میٹر کا احاطہ کرے گی۔

اپنی پدیاترا کے دوران جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر ریاستی بی جے پی نے ٹی آر ایس حکومت کو نشانہ ملامت بناتے ہوئے الزام عائد کیا کہ ریاستی حکومت، تمام محاذوں پر ناکام ہوگئی ہے۔

کانگریس نے الزام عائد کیا کہ بنڈی سنجے، پدیاترا کے دوران فرقہ وارانہ منافرت کو فروغ دے رہے ہیں۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.