حیدرآباد اوراضلاع میں موسمی امراض میں اضافہ

وحیدرآباد سمیت کھمم، رنگاریڈی،کوتہ گوڑم، میڑچل،عادل آباد،محبوب نگر میں ڈینگی کے معاملات زائد درج کئے جارہے ہیں۔کوتہ گوڑم، حیدرآباد،مُلگ میں ملیریا کے زائد معاملات سامنے آئے ہیں۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے دارالحکومت حیدرآباد کے ساتھ ساتھ ریاست کے اضلاع میں حالیہ دنوں ہوئی بارش سے موسمی امراض سے متاثرہونے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے۔ کئی مواضعات میں عوام بخار سے متاثر ہوگئے ہیں۔ ہر گھر میں دو تا تین افراد بخار سے متاثر ہیں جس کے نتیجہ میں اسپتالوں میں آوٹ پیشنٹ شعبہ سے رجوع ہونے والے افراد کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے۔شہر میں بھی تقریبا ایسی ہی صورتحال دیکھی جارہی ہے۔

شہر حیدرآباد میں بچوں کا علاج کرنے والے اہم سرکاری نیلوفر اسپتال میں بستر تقریبا پُرہوگئے ہیں۔ پبلک ہیلت سنٹر سے لے کرکمیونٹی، ایریا، ضلع اسپتالوں میں مریضوں کی تعداد میں اضافہ دیکھاجارہا ہے۔سرکاری اسپتالوں سے رجوع ہونے والوں میں دس فیصد کو اسپتال میں داخل کیاجارہا ہے۔

پرائیویٹ اسپتالوں میں 25فیصد افراد ان پیشنٹ کے طورپر داخل کئے گئے۔ ریاستی دارالحکومت حیدرآباد سمیت کھمم، رنگاریڈی،کوتہ گوڑم، میڑچل،عادل آباد،محبوب نگر میں ڈینگی کے معاملات زائد درج کئے جارہے ہیں۔کوتہ گوڑم، حیدرآباد،مُلگ میں ملیریا کے زائد معاملات سامنے آئے ہیں۔

موجودہ طورپر ریاست میں بخار سے متاثرہونے والوں کی تعداد 80ہزار تا ایک لاکھ کے درمیان ہے۔ بعض اضلاع کے اسپتالوں میں ان پیشنٹ شعبہ میں بستروں کی کمی دیکھی جارہی ہے جس کے بعد ایک ہی بستر پر دو مریضوں کو بھی رکھنے کی صورتحال پیداہوگئی ہے۔ شہر حیدرآباد میں بچوں کے نیلوفر اسپتال کے تمام بستروں پر مریض ہیں۔ ریاست میں 50فیصدبچے بخار سے متاثر ہیں جن کی عمر13برس ہے۔ یہ بچے زیادہ تر ڈینگی، ملیریا،ٹائی فڈ،ہیضہ ا،نمونیا سے متاثر ہیں۔ نیلوفر اسپتال سے رجوع کئے جانے والے بچے ڈینگی،نمونیا سے متاثر ہیں۔

(یواین آئی)

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.