تلنگانہ میں بس کرایوں میں اضافہ یقینی

بس کرایہ میں اضافہ کی تجویز کو حتمی شکل(منظوری دینے) کیلئے چیف منسٹر کے سی آر کے ساتھ ٹی ایس آر ٹی سی کے عہدیداروں کا اجلاس بہت جلد منعقد ہوگا جس میں بس کرایوں میں اضافہ کی تجویز کو منظوری دی جانے کی توقع ہے۔

حیدرآباد: ریاست تلنگانہ میں آر ٹی سی بس کرایوں میں اضافہ تقریباً طئے ہے صرف چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ سے منظوری ملنے کا انتظار ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر نے آر ٹی سی انتظامیہ کو بس کرایوں میں اضافہ کی تجویز پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔ کے چندر شیکھر راؤ کی ہدایت پر آر ٹی سی انتظامیہ نے بس کرایوں میں اضافہ کی تجویز داخل کردی ہے۔ اس پر فیصلہ آئندہ کا بینہ اجلاس میں لیا جائے گا۔

 ٹی ایس آر ٹی سی نے چیف منسٹر آفس کو چار تجاویز روانہ کی ہیں۔ اگر چیکہ چیف منسٹر نے بس کرایوں میں اضافہ کی تجاویز روانہ کرنے کی ہدایت دی تھی مگر یہ معاملہ سیاسی وجوہات کے بنا پر تقریباً ایک ماہ سے تعطل کا شکار ہے۔ اب جب کہ حلقہ اسمبلی حضور آباد کا ضمنی الیکشن کا عمل مکمل ہوچکا ہے اس لئے بس کرایوں میں اضافہ کی تجویز پر ایک بار پھر سرگرمیاں شروع ہوگئی ہیں۔

 بس کرایہ میں اضافہ کی تجویز کو حتمی شکل(منظوری دینے) کیلئے چیف منسٹر کے سی آر کے ساتھ ٹی ایس آر ٹی سی کے عہدیداروں کا اجلاس بہت جلد منعقد ہوگا جس میں بس کرایوں میں اضافہ کی تجویز کو منظوری دی جانے کی توقع ہے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ حکومت نے دسمبر2019 میں بس کرایوں پر نظر ثانی کی تھی۔

تقریباً دوسال قبل آر ٹی سی ملازمین کی طویل ہڑتال کے بعد بس کرایوں میں اضافہ کیا گیا تھا۔ کرایوں میں ہر ایک کیلومیٹر پر 20 پیسہ کا اضافہ کیا گیا تھا جس کی وجہ سے عوام پر سالانہ 550 کرڑو روپے کا مالی بوجھ پڑا تھا۔ اُس وقت ڈیزل کی قیمت فی لیٹر68 روپے تھی مگر آج ڈیزل کی قیمت فی لیٹر105روپے تک پہنچ گئی ہے تاہم مرکزی حکومت کی جانب سے اکسائز ڈیوٹی میں کمی کے سبب ڈیزل کی قیمت میں کمی آئی ہے مگر پھر بھی ڈیزل کی قیمت فی لیٹر90 روپے(آر ٹی سی کو ڈسکاونٹ پر دستیاب) ہے ۔

اس طرح آر ٹی سی کو یومیہ 90لاکھ روپے کی بچت ہورہی ہے۔ ڈیزل پر 10روپے فی لیٹر اکسائز ڈیوٹی میں کمی سے آر ٹی سی کو بہت زیادہ راحت ملے گی۔ اس طرح کارپوریشن کو یومیہ6.50 لاکھ لیٹر پر65لاکھ روپے کی بچت ہوگی۔ آر ٹی سی میں ہائر (خانگی) بسوں پر یہ فائدہ یومیہ90لاکھ روپے تک پہنچ جائے گا۔

 سابق میں جب سے بس کرایوں میں اضافہ کیا گیا تب سے اب تک ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر20 روپے اضافہ ہوا ہے۔ اس سے تقابل کیا جائے تو آر ٹی سی کو یومیہ1.22 کروڑ روپے کا خسارہ ہورہا ہے۔ان حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے آر ٹی سی بس کرایوں میں اضافہ ناگزیر ہوگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق آر ٹی سی انتظامیہ نے چیف منسٹر دفتر کو 4 تجاویز روانہ کی ہیں۔

 ان میں فی کیلو میٹر 25,20,15 اور30 پیسہ اضافہ کی تجاویز شامل ہیں۔ اگر کرایوں میں فی کیلو میٹر20پیسہ کا اضافہ کیا جاتا ہے تو آر ٹی سی کو 625 کروڑ کی زائد آمدنی ہوگی اگر25 پیسہ فی کیلو میٹر اضافہ سے750 کروڑ اور فی کیلو میٹر پر30 پیسہ اضافہ کی تجویز کو منظوری دی جاتی ہے تو کارپوریشن کو900 کروڑ روپے حاصل ہوں گے۔

آر ٹی سی کے نقطہ نظر سے دیکھا جائے تو فی کیلو میٹر25پیسہ اضافہ کی تجویز معقول دکھائی دے رہی ہے۔ اگر فی کیلو میٹر30پیسہ اضافہ کیا جاتا ہے تو یہ کارپوریشن کے حق میں بہت ہی بہتر اقدام رہے گا۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.