تلنگانہ میں نوجوان نے معذور لڑکی سے محبت کی شادی کرلی

وسنت راو پہلی ہی نظر میں نرسماں سے محبت ہوگئی اور اسی لمحہ اس نے نرسماں سے شادی کا فیصلہ کیا لیکن اس میں مسئلہ یہ تھا کہ نرسماں معذور تھی اور چل پھر نہیں سکتی تھی۔ وسنت راو کی محبت،معذوری میں رکاوٹ نہیں بنی۔ لڑکی کے ماں باپ بھی نہیں تھے۔

حیدرآباد: محبت کے نام پر دھوکہ دینے کے اس دور میں ایک نوجوان نے معذورلڑکی سے محبت اور پھرشادی کرلی،حالانکہ اس کے گھر والے اس شادی کے مخالف تھے۔اس نوجوان نے ثابت کردیا کہ معذوری محبت اورشادی میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے۔لڑکے نے رشتہ داروں کی مخالفت کے باوجود اس معذور لڑکی سے شادی کرلی۔

یہ واقعہ تلنگانہ کے ضلع بھدرادری کوتہ گوڑم میں پیش آیا۔ضلع کے ایلندو علاقہ کے رہنے والے وسنت راونے منوگورو علاقہ کی رہنے والی نرسماں کو ایک شادی کی تقریب میں دیکھا اور پہلی ہی نظر میں اس کو نرسماں سے محبت ہوگئی اور اسی لمحہ اس نے نرسماں سے شادی کا فیصلہ کیا لیکن اس مسئلہ یہ تھا کہ نرسماں معذور تھی اور چل پھر نہیں سکتی تھی۔ وسنت راو کی محبت،معذوری میں رکاوٹ نہیں بنی۔لڑکی کے ماں باپ بھی نہیں تھے۔

اس نے ڈگری تک تعلیم حاصل کی تھی اوروہ ٹیلر کا کام کرتی تھی۔شادی سے دونوں کے رشتہ داروں کے انکار پر یہ دونوں معذورین کی تنظیم سے رجوع ہوئے جس پر کوتہ گوڑم کے ردراپور کی ایک مندر میں ان کی شادی کا انتظام کیا گیا۔اس طرح دونوں شادی کے اٹوٹ بندھن میں بندھ گئے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.