جگا ریڈی کے خلاف چیف الیکٹورل آفیسر سے شکایت

جگا ریڈی نے رائے دہندوں سے مبینہ طور پر یہ کہا ہے کہ رائے دہی سے قبل انہیں 50 ہزار روپے مل جائیں گے اور ووٹ ڈالنے کے بعد مابقی2لاکھ روپے ادا کئے جائیں گے۔

حیدرآباد: حکمراں جماعت ٹی آر ایس کے جنرل سکریٹری سرینواس ریڈی اور بھرت نے آج چیف الیکٹورل آفیسر تلنگانہ ششانک گوئل سے ملاقات کرتے ہوئے کانگریس کے رکن اسمبلی جگا ریڈی کے خلاف تحریری شکایت پیش کی جس میں ٹی آر ایس قائدین نے ریڈی پر الزام عائد کیا کہ وہ ادارہ جات مقامی زمرہ کے تحت منعقد شدنی حلقہ میدک کے ایم ایل سی الیکشن میں رائے دہندوں (ایم پی ٹی سیز، زیڈ پی  ٹی سیز) سے فون پر ربط پیدا کرتے ہوئے انہیں لبھانے اور انہیں نذرانہ کا پیشکش کررہے ہیں۔

 ششانک گوئل سے نمائندگی کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے ٹی آر ایس قائدین نے کہا کہ ریاست میں جب کبھی ایم ایل سی الیکشن منعقد ہوتے ہیں چند سیاسی جماعتیں، مطلوبہ تعداد نہ ہونے کے باوجود الیکشن میں حصہ لیتے ہوئے ووٹرس پر اثر انداز ہونے کی کوشش کرتی ہیں اور ووٹروں کو نذرانہ کا پیشکش کرتے ہوئے انتخابات میں کامیابی حاصل کرنا چاہتی ہیں۔

 انہوں نے الزام عائد کیا کہ سنگاریڈی کے رکن اسمبلی جگا ریڈی، رائے دہندوں کو اپنی پارٹی کے حق میں ووٹ کا استعمال کرنے کی ترغیب دینے کی کوشش کررہے ہیں۔ ریڈی نے رائے دہندوں سے مبینہ طور پر یہ کہا ہے کہ رائے دہی سے قبل انہیں 50 ہزار روپے مل جائیں گے اور ووٹ ڈالنے کے بعد مابقی2لاکھ روپے ادا کئے جائیں گے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ چیف الیکٹورل آفیسر نے جگا ریڈی کے خلاف کاروائی کا تیقن دیا ہے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.