حیدرآباد میں اسمارٹ پری پیڈ میٹرس دستیاب کرانے کا فیصلہ

پاور ڈسٹری بیوشن کمپنی، صارفین پر مالی بوجھ عائد کئے بغیر، اسمارٹ پری پیڈ برقی میٹرس کی تنصیب اور ان کی دیکھ بھال کی ذمہ داری خانگی ایجنسی کے حوالے کرے گی۔

حیدرآباد: محکمہ برقی نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن (جی ایچ ایم سی) حدود میں اسمارٹ پری پیڈ میٹرس دستیاب کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

پاور ڈسٹری بیوشن کمپنی، صارفین پر مالی بوجھ عائد کئے بغیر، اسمارٹ پری پیڈ برقی میٹرس کی تنصیب اور ان کی دیکھ بھال کی ذمہ داری خانگی ایجنسی کے حوالے کرے گی۔

سینئر عہدیدار کے ذرائع کے مطابق مرکزی حکومت نے ڈسٹری بیوشن کمپنیز کو فنڈس الاٹ کئے ہیں جس میں سے 35 سے 40 فیصد فنڈس کو اسمارٹ میٹرس پر خرچ کیا جائے گا۔

بڑی تعداد میں اسمارٹ پری پیڈ برقی میٹرس دستیاب کرانے سے اس پر آنے والا خرچ بھی کم ہوگا۔ تلنگانہ سدرن ریجن الیکٹریسٹی ڈسٹری بیوشن کمپنی (ٹی ایس ایس پی ڈی سی ایل) نے امید ظاہر کی کہ پری پیڈ برقی میٹرس کی تنصیب اور ان کے مینٹیننس کیلئے ایجنسی کا انتخاب اس کیلئے کوئی مسئلہ نہیں رہے گا اور یہ ایجنسی چند برسوں تک کام کرے گی۔

سال 2025 تک جی ایچ ایم سی میں اسمارٹ برقی میٹرس دستیاب کرانے کا نشانہ رکھا گیا ہے۔

یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ شہر حیدرآباد کے سرکاری دفاتر، دواخانوں اور پارکس میں اسمارٹ پری پیڈ برقی میٹرس دستیاب ہیں۔ دیڑھ سال قبل 8ہزار کے قریب مکانوں میں سنگل فیز پر یہ میٹرس نصب کئے جاچکے تھے۔

اسمارٹ گرڈ پراجکٹ کے تحت جیڈی مٹلہ صنعتی علاقہ میں یہ میٹرس نصب کئے گئے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.