دتاتریہ کا الائی بلائی پروگرام

الائی بلائی پروگرام کو سماج میں بھائی چارگی کے فروغ کا بہترین ذریعہ قرار دیتے ہوئے دتاتریا نے کہا کہ اس پروگرام میں مذہب، ذات پات اور زبان کے فرق کو بھلا کر عوام اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

حیدرآباد: نائب صدر جمہوریہ ہند ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ملک پریشان کن صورتحال سے باہر آرہا ہے تاہم ابھی بھی ہمیں چوکس وچوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔

آج گورنر ہریانہ بنڈارو دتاتریہ کی جانب سے جل وہار میں منعقدہ الائی بلائی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک کے ہر شہری کو کووڈ19 رہنمایانہ خطوط پر لازمی طور پر عمل کرنا چاہئے۔

الائی بلائی پروگرام کو سماج میں بھائی چارگی کے فروغ کا بہترین ذریعہ قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس پروگرام میں مذہب، ذات پات اور زبان کے فرق کو بھلا کر عوام اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

وینکیا نائیڈؤ نے ملک کی ترقی و خوشحالی کے لئے اسی جذبہ کو اختیار کرتے ہوئے آگے بڑھنے کا مشورہ دیا۔ نائب صدر جمہوریہ ہند نے کہا کہ ہم کو اپنی قدیم تہذیب اور شناخت کی حفاظت کرنا چاہئے۔ ہمارے عظیم فلسفہ کا تحفظ اور فروغ کیلئے کام کرنا چاہئے۔

انہوں نے بتکماں تہوار کو تلنگانہ کی شناخت قرار دیتے ہوئے تشکیل تلنگانہ کے بعد بتکماں تہوار کو فروغ دینے کی کوششوں کو قابل ستائش قرار دیا۔یو این آئی کے مطابق گورنر ہریانہ بنڈارو دتاتریہ اور ان کی دختر وجیہ لکشمی کی جانب سے منعقدہ دسہرہ ملاپ (الائی بلائی) پروگرام میں نائب صدرجمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو کے بشمول ممتاز شخصیتوں نے شرکت کی۔

حسین ساگر کے کنارے واقع جل وہار میں منعقدہ اس گٹ ٹو گیدر پروگرام میں تلنگانہ گورنر ڈاکٹر تمیلی سائی سوندرا راجن نے کلچرل پروگرام کا افتتاح کیا۔ گورنر نے خواتین کے ساتھ رقص بھی کیا۔

اس پروگرام میں مرکزی وزیر جی کشن ریڈی، گورنر ہماچل پردیش راجندر وشواناتھ آرلیکر، جنا سینا پارٹی کے سربراہ پون کلیان، صدرنشین بھارت بائیوٹیک کرشنا ایلا، ڈاکٹر ریڈی لیابس، کے سربراہ پرساد ریڈی، ایشن انسٹیٹیوٹ آف گیاسٹرو انٹرٹیز کے صدر نشین ڈاکٹر ناگیشور راؤ اور دیگر شریک تھے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.