دریاؤں پر کنٹرول، مرکز کے فیصلہ پر 14 اکتوبر سے عمل آوری

دونوں تلگو ریاستوں سے اپیل کی گئی کہ سری سیلم اور ناگر جنا ساگر پراجکٹ کے تمام ڈائرکٹ آوٹ لفٹس کوبورڈ کے تحت لانے میں تعاون کیا جائے۔

حیدرآباد: کرشنا ریورمینجمنٹ بورڈکی جانب سے مرکزی حکومت کے فیصلہ دریاگوداوری اور کرشنا پرتلنگانہ میں تعمیرکردہ پراجکٹس کو کنٹرول میں لینے کے فیصلہ پر14 اکتوبر سے عمل آوری کے لئے تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ واضح رہے کہ مرکزی وزرات جل شکتی نے 14اکتوبرسے دونوں ریاستوں میں دونوں دریاوں پرتعمیرمشترکہ پراجکٹس کو اپنے کنٹرول میں لینے کے لئے اعلامیہ جاری کیاتھا۔

کے آرایم بی کی جانب سے جاری کردہ اطلاع کے مطابق دوسرے شیڈول کے تحت تمام ڈائرکٹ آوٹ لفٹس کو بورڈ کے کنٹرول میں لیا جائے گا۔ دونوں تلگو ریاستوں سے اپیل کی گئی کہ سری سیلم اور ناگر جنا ساگر پراجکٹ کے تمام ڈائرکٹ آوٹ لفٹس کوبورڈ کے تحت لانے میں تعاون کیا جائے۔

کرشنا ریورمینجمنٹ بورڈ کی جانب سے پہلے مرحلہ کے تحت پانچ پراجکٹس کے حدود میں 29 مراکزکواپنی تحویل میں لینے کا منصوبہ ہے دیگر پراجکٹس پردونوں ریاستوں کی جانب سے کئے گئے اعتراضات کی وجہ سے بعد میں غورکرنے کافیصلہ کیاگیا۔ بورڈکی جانب سے پراجکٹس کے اساس پر عملہ دفاتر‘ مشنری ودیگرامورپرتفصیلی رپورٹ تیار کی گئی۔ اس ماہ کی 14تاریخ سے گزیٹ نوٹیفکیشن پرعمل آوری کاآغاز ہوگا۔

متعلقہ
ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.