دکن میں تاریخی آبرسانی نظام کے احیاءپر اردو یونیورسٹی میں سیمینار

اروند کمار، آئی اے ایس، اسپیشل چیف سکریٹری، میونسپل ایڈمنسٹریشن اینڈ اربن ڈیولپمنٹ (MA&UD)، حکومت تلنگانہ و ڈائرکٹر جنرل، نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف اربن مینجمنٹ (NIUM) مہمانِ خصوصی ہوں گے۔

حیدرآباد: مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اور ایسوسی ایشن فار دی اسٹڈی آف پرشینیٹ سوسائٹیز (ASPS) یکمنومبر کو دوپہر 2 بجے ہارون خان شیروانی سنٹر فار دکن اسٹڈیز (ایچ کے سی ڈی ایس)، مانو میں ایک سیمینار ”دکن میں آبرسانی کے تاریخی نظام کا احیا “ کا انعقاد کر رہے ہیں۔

اس موضوع پر سلسلہ وار سیمینار کا منصوبہ بنایا گیا ہے تاکہ دکن میں آبرسانی کے تاریخی نظام اور تکنیک کی اہمیت اورامکانی احیاءکا جائزہ لیا جائے۔ پروفیسر سلمیٰ احمد فاروقی، ایچ کے سی ڈی ایس، کوآرڈینیٹر سمینار کے بموجب پروگرام کی صدارت پروفیسر سید عین الحسن، وائس چانسلر، مانو کریں گے ۔

اروند کمار، آئی اے ایس، اسپیشل چیف سکریٹری، میونسپل ایڈمنسٹریشن اینڈ اربن ڈیولپمنٹ (MA&UD)، حکومت تلنگانہ و ڈائرکٹر جنرل، نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف اربن مینجمنٹ (NIUM) مہمانِ خصوصی ہوں گے۔ پروفیسر سنجے سبودھ، شعبہ تاریخ، یونیورسٹی آف حیدرآباد؛ کلپنا رمیش، کنزرویشنسٹ؛ وسنتا سوبھا تورگا، کنزرویشن آرکٹیکٹ بھی خطاب کریں گے۔

سجاد شاہد، کنزرویشن کنسلٹنٹ اور شریک کنوینر INTACH ماہرانہ رائے پیش کریں گے اور پروفیسر شکیل احمد، ایمریٹس سائنٹسٹ اور پروفیسر (AcSIR)، CSIR-National Geophysical Research Institute کے اختتامی کلمات ہوں گے۔ ڈاکٹر اے سبھاش، اسسٹنٹ پروفیسر، ایچ کے سی ڈی ایس سیمینار کے شریک کورآڈنیٹرس ہیں۔

ذریعہ
پریس نوٹ

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.