سی ای او آغاخاں ٹرسٹ کلچرل کی اکبر الدین اویسی سے ملاقات

اکبراویسی نے گنبدان قطب شاہی کی عظمت رفتہ کو بحال کرنے اوران کے تحفظ سے متعلق جاری کاموں کی ستائش کی اور کہا تھا کہ تحفظ کے ان کاموں سے 600 سالہ قدیم ہیرٹیج ڈھانچوں کو ایک نئی طاقت دی گئی۔

حیدرآباد: اے آئی ایم آئی ایم کے فلور لیڈر اکبر الدین اویسی سے آج آغا خان ٹرسٹ فار کلچرر (کے  کے ٹی سی) کے سی ای او اور راتیش نندا نے ملاقات کی۔ راتیش نندا نے یہاں مجلس کے ہیڈ کوارٹردارلسلام میں اویسی سے ملاقات کی اور اویسی نے تاریخی قطب شاہی گنبدان کے تحفظ کی مساعی کی ستائش کی۔

 آغا خان ٹرسٹ، گذشتہ8برسوں سے گنبدان کے تحفظ، تزئین نو کا کام انجام دے رہا ہے۔ گنبدوں کے تحفظ کے75 فیصد کام مکمل ہوچکے ہیں اور مابقی کام2025 تک مکمل ہوجائیں گے۔ اکبر الدین اویسی سے ملاقات کے دوران نندا نے یہ بات بتائی۔

 اسمبلی کے حالیہ سیشن میں مجلس کے فلور لیڈر نے گنبدان قطب شاہی کی عظمت رفتہ کو بحال کرنے او ران کے تحفظ سے متعلق جاری کاموں کی ستائش کی اور کہا تھا کہ تحفظ کے ان کاموں سے 600 سالہ قدیم ہیرٹیج ڈھانچوں کو ایک نئی طاقت دی گئی۔

یہاں جاری کردہ ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ انہوں نے (اکبراویسی) راتیش ننداسے شہر کے کنچن باغ کے پھسل بنڈہ علاقہ میں واقع پائیگا گنبدان کے تزئین نو کام انجام دینے کی خواہش کی تھی۔ پائیگا گنبدان کامپلکس بھی شہر کے عجائبات میں شامل ہیں۔ پائیگاخاندان، اپنے آرکٹیکچرل ایکسلنس کیلئے جانا جاتا تھا ان کے مقبرے میں تعمیر کے اعلیٰ مثال ہیں۔ ان مقبروں  میں موزایک ٹائلس، کا استعمال کیا گیا۔ خوبصورت دست کاری کے فن دکھائی دیتا ہے مگر اب پائیگا گنبدان ویران ہیں ان پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے۔

 حکومت تلنگانہ پائیگا گنبدان کو یکسر نظر انداز کردیا ہے۔ اویسی نے یہ بات بتائی کہ آغاخان ٹرسٹ فار کلچرل نے پائیگاگنبدان کے تحفظ اور ان کی عظمت رفتہ بحالی کے کام انجام دینے پر رضامندی کا اظہار کیا۔ مجلس کے قائد  کے ساتھ ٹرسٹ کے نمائندے بھی نومبر میں پائیگاگنبدان کا دورہ کریں گے۔ اس موقع پر مجلس کے ارکان اسمبلی سید احمد پاشاہ قادری، کوثر محی الدین، اور ٹرسٹ کے نمائندے موجود تھے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.