عصمت ریزی کی شکار لڑکی کے خاندان سے شرمیلا کی ملاقات

شرمیلا نے متاثرہ لڑکی کے گھر کے سامنے احتجاج شروع کردیا۔انہوں نے کہاکہ کے سی آر کی جانب سے اس مسئلہ پر ردعمل ظاہر کئے جانے تک وہ نہیں اٹھیں گی۔

حیدرآباد: شہر حیدرآباد کے علاقہ سعیدآباد کی سنگارینی کالونی میں 6سالہ لڑکی کی عصمت ریزی کے بعد اس کے قتل کی واردات پر وائی ایس آرتلنگانہ پارٹی کی صدر وائی ایس شرمیلا نے آج متاثرہ کے ارکان خاندان سے ملاقات کرتے ہوئے پُرسہ دیا۔

انہوں نے لڑکی کو بھرپورخراج پیش کیا اور اس خاندان سے تفصیلات حاصل کیں۔

واضح رہے کہ اس واقعہ کے بعد ہوئے مقامی افراد کے احتجاج نے اس علاقہ کو دہلا کررکھ دیا تھا۔مقامی افراد نے پولیس پر سنگباری بھی کی تھی۔اس واقعہ کا ملزم ہنوز فرار ہے جس کی پولیس شدت کے ساتھ تلاش کررہی ہے۔

انہوں نے بعد ازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ جب لڑکی کی نعش،ملز م کے مکان سے برآمد ہوئی تو اس کو متاثرہ کے والدین کو دیکھنے کی بھی اجازت نہیں دی گئی اور پولیس نے مقامی افراد پر لاٹھی چارج کیا۔اس مسئلہ کو اجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے میڈیا سے خواہش کی کہ اس مسئلہ کو اجاگرکریں۔

شرمیلا نے متاثرہ لڑکی کے گھر کے سامنے احتجاج شروع کردیا۔انہوں نے کہاکہ کے سی آر کی جانب سے اس مسئلہ پر ردعمل ظاہر کئے جانے تک وہ نہیں اٹھیں گی۔

انہوں نے اس معاملہ میں پولیس پر ناکامی کا الزام لگایا۔شرمیلا نے مطالبہ کیاکہ متاثرہ لڑکی کے خاندان کے لئے دس لاکھ روپئے کا حکومت اعلان کرے۔

مختلف سیاسی جماعتوں کے لیڈروں نے متاثرہ کے خاندان سے ملاقات کرتے ہوئے پُرسہ دیا اور ڈھارس بندھائی۔کانگریس کے رکن پارلیمنٹ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے بھی اس لڑکی کے خاندان سے ملاقات کرتے ہوئے پُرسہ دیا۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.