مخالف کسان قوانین خطرناک: جگار یڈی

کسانوں کو درپیش خدشات دور کرے مگر مرکزی حکومت اڑیل رویہ اختیار کرتے ہوئے کسانوں سے بے رخی اختیار کرتی جارہی ہے۔ جگاریڈی نے کہا کہ ملک میں موافق کسان واحد جماعت صرف کانگریس پارٹی ہی ہے۔

حیدرآباد: کارگذار صدر ٹی پی سی سی ٹی جگاریڈی نے مخالف کسان قوانین کو خطرناک قرار دیا۔آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب کسان ان سیاہ قوانین کے خلاف احتجاج کررہے ہیں تو حکومت کا یہ کام ہے کہ وہ احتجاجی کسانوں سے بات چیت کرتے ہوئے مسائل حل کرنے کی کوشش کرے۔

 کسانوں کو درپیش خدشات دور کرے مگر مرکزی حکومت اڑیل رویہ اختیار کرتے ہوئے کسانوں سے بے رخی اختیار کرتی جارہی ہے۔ جگاریڈی نے کہا کہ ملک میں موافق کسان واحد جماعت صرف کانگریس پارٹی ہی ہے۔ باقی تمام جماعتیں بشمول ٹی آر ایس، وائی ایس آر کانگریس، کسانوں کے مفادات کے خلاف کام کررہی ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ مخالف کسان، سیاہ زرعی قوانین کے خلاف سب سے پہلے سونیا گاندھی اور راہول گاندھی نے پارلیمنٹ میں آواز اٹھائی تھی۔ سارے ملک میں کسان سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔ مگر تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں کسانوں کو احتجاج منظم کرنے سے روکا جارہا ہے۔

حکومت، پولیس کے ذریعہ کسانوں کے خلاف فرضی مقدمات درج کروانے کی دھمکی کی وجہ سے کسان احتجاج کیلئے باہر نہیں آ رہے ہیں۔ جگا ریڈی نے مزید کہا کہ اترپردیش میں چار کسانوں کی ہلاکت کے ذمہ دار مرکزی مملکتی وزیر داخلہ کے فرزند کو ابھی تک گرفتارنہیں کیاگیا۔ صرف ایف آئی آر درج کرتے ہوئے ڈرامہ بازی کی جارہی ہے۔

 ٹی آر ایس، بی جے پی اور وائی ایس آر کانگریس پارٹی کو ایک نظریہ کے حامل جماعتیں قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عوام کو ان تینوں جماعتوں اور کے سی آر، جگن موہن ریڈی اور نریندر مودی کی حقیقت معلوم ہوچکی ہے اور عوام آئندہ انتخابات میں ان تینوں جماعتوں کو سبق سکھانے کیلئے تیار ہیں۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.