مسلمان اپناطرز عمل بدلیں: کل ہند مجلس تعمیر ملت کا جلسہ یوم رحمۃ للعٰلمینؐ

مولانا خالد سیف اللہ رحمانی کارگزار جنرل سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈنے کہا کہ رسول اللہ ﷺ خاندان اور معاشرہ کی اصلاح پر بڑی توجہہ دیتے تھے اور ہم کو آج اس پہلو پر توجہہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ مسلم بچوں کی اصلاح اور وہ دوسروں کے لئے نمونہ بنیں۔

حیدرآباد: جب تک مسلمان رسول اکرم ﷺ کی تعلیمات پر سختی سے کاربند نہ ہوجائیں اور قرأن و سیرت کی طرف نہ لوٹیں اس وقت تک ان کو دنیا اور آخرت میں کامیابی نصیب نہیں ہوسکتی ہے۔ مسلمان سیرت طیبہ کی روشنی میں اپنا طرز عمل بدلیں اور دوسروں کے لئے نمونہ بن جائیں۔

یہ پیام کل نمائش میدان پرکل ہند مجلس تعمیر ملت کے زیر اہتمام منعقدہ 72ویں جلسہ یوم رحمۃ للعٰلمین ﷺ میں مسلمانوں خصوصاً نوجوانوں کو دیا گیا۔ یہ جلسہ زیر نگرانی صدر کل ہند مجلس تعمیر ملت جناب محمد ضیأ الدین نیّر منعقد ہوا۔ محمد عبدالرشید نے سیرت طیبہ پر تلگو میں خطاب کیا۔

صدر استقبالیہ محمد انیس الدین نے خیر مقدم کرتے ہوئے سیرت طیبہ ﷺ اور اسلامی تعلیمات کو نئی نسل تک پہنچانے کی ضرورت پر زور دیا۔ صدر استقبالیہ انیس الدین‘ نواب احمد عالم خان اور نگران جلسہ ضیأ الدین نیّر نے جلسہ کے موقع پرشائع کردہ سوونیر کی رسم اجرا انجام دی جسے چیف آرگنائزر محمد وہاج الدین نے ترتیب دیا ہے۔

معتمد عمومی عمر احمد شفیق نے تعمیر ملت کی رپورٹ پیش کی اور تعمیر ملت کی کارکردگی سیرت طیبہ کی روشنی میں کے زیر عنوان خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تنظیم نے مسلمانوں میں اعتماد اور بے باکی پیدا کرنے میں اہم رول ادا کیا ہے۔

مفتی حافظ محمد قاسم صدیقی تسخیر (امریکہ) نے تلاوت قرأن‘ کتاب و حکمت کی تعلیم اور تزکیہ کی روشنی میں رسول اکرم ﷺ کی سیرت طیبہ پر روشنی ڈالی اور کہا کہ دنیا میں اللہ کی ہستی کے بارے میں کوئی نہیں جانتا تھا‘ صرف ایک ہی ہستی ہے جس نے دنیا کو اللہ کی معرفت کروائی۔ رسول اکرم ﷺ کی ذات گرامی ہمارے لئے ایک عظیم نعمت ہے جو اللہ نے ہم کو عطا فرمائی ہے۔

مولانا عمرین محفوظ رحمانی سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے کہا کہ عزت و ذلت کے پیمانے اللہ کے پاس ہیں۔ نمرود شداد اور فرعون باقی نہیں رہے اور مٹ گئے۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت ہے کہ مسلمان رسول اللہ ﷺ کی تعلیمات کو سینہ سے لگائیں‘ سنتوں کو زندہ کریں۔۔

مولانا خالد سیف اللہ رحمانی کارگزار جنرل سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈنے کہا کہ رسول اللہ ﷺ خاندان اور معاشرہ کی اصلاح پر بڑی توجہہ دیتے تھے اور ہم کو آج اس پہلو پر توجہہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ مسلم بچوں کی اصلاح اور وہ دوسروں کے لئے نمونہ بنیں۔ آج جو خطرنا ک اور سنگین مسئلہ ہے وہ مسلم بچیوں کا غیر مسلموں کے ساتھ آنا جانا اور ان کے ساتھ شادیاں کرنے کا ہے‘ پورے ملک میں ایسے واقعات ہورہے ہیں اور اس کی وجہہ یہ ہے کہ ہم نے خاندان پر توجہہ دینا چھوڑ دیا اور دنیا کے کاروبار اور دوسری مصروفیات میں الجھ کر رہ گئے ہیں۔

سابق رکن پارلیمنٹ مولانا عبید اللہ خان اعظمی نے ’نبی انقلاب‘ کے موضوع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت محمد ﷺ قانون الٰہی کو نافذ کرنے اور برائیوں کو بھلائی سے بدلنے کے لئے تشریف لائے۔ اللہ نے آپ ﷺ کو داعی انقلاب بناکر بھیجا۔ حکومتوں کے بدلنے سے انقلاب نہیں آتا‘ فکر اور حکمت عملی کو بدلنے سے انقلاب آتا ہے اور یہی کام حضور اکرم ﷺ نے کر دکھایا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانو ں کے لئے کرنے کے دو کام ہیں‘ ایک اللہ کے حقوق ادا کرنا‘ دوسرے مخلوق کے حقوق ادا کرنا جس کو حقوق العباد کہتے ہیں۔

نگران جلسہ محمد ضیأ الدین نیّر نے کہا کہ تعمیر ملت 72سال جو کام کررہی ہے وہ آپ کے سامنے ہے‘ آئندہ بھی اس کا سلسلہ جاری رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان خوف و دہشت کا شکار ہونے سے بچیں‘ مسلمان کسی صورت میں ڈرپوک نہیں ہوتا‘ خاص طور پر ایسے وقت جب معاملہ کفر و شرک کا ہوتو وہ ثابت قدم رہتا ہے۔ انہوں نے موجودہ حالات میں مسلمانوں کی بے بسی و لاچاری کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا تھا کہ ایک وقت ایسا آئے گا جب دنیا کی قومیں مسلمانوں پر اس طرح ٹوٹ پڑیں گی جیسے لوگ دستر خوان پر ٹوٹ پڑتے ہیں۔ اس وقت مسلمانوں میں وھن کی بیماری پیدا ہوجائے گی‘ صحابہ کے پوچھنے پر آپ ﷺ نے بتایا کہ یہ بیماری دنیا کی حرص اور موت کا خوف ہے۔

نگران جلسہ نے کہا کہ دولت کمانا منع نہیں ہے لیکن اس میں اعتدال ہونا چاہئے۔ انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ اسلام کی تعلیم حاصل کرنے پر توجہ دیں اور دین پر سختی کے ساتھ کاربند ہوجائیں۔

نذیر احمد خان ایڈوکیٹ امبا جوگائی نے ماب لنچنگ پر نائب صدر ڈاکٹر محمد مشتاق علی نے زرعی قوانین اور کسان مورچہ کے تعلق سے اور محمد وہاج الدین صدیقی نے مبلغ اسلام مولانا کلیم صدیقی کی گرفتاری کے خلاف قرار داد پیش کی۔ مفتی حافظ سید صادق محی الدین کی دعأ پر جلسہ اختتام کو پہنچا۔

ذریعہ
پریس نوٹ

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.