ٹی آرایس ایم پیز کا لوک سبھا، راجیہ سبھا میں احتجاج

ٹی آرایس کے رکن پارلیمنٹ ناماناگیشورراو نے ایوان میں اس مسئلہ پر کہا کہ تلنگانہ سے دھان کی خریداری مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے جو وہ پورانہیں کررہی ہے۔

حیدرآباد: تلنگانہ سے دھان کی خریداری کامطالبہ کرتے ہوئے ٹی آرایس کے ایم پیز نے لوک سبھا میں پلے کارڈس کے ساتھ احتجاج کیا۔ ٹی آرایس کے رکن پارلیمنٹ ناماناگیشورراو نے ایوان میں اس مسئلہ پر کہا کہ تلنگانہ سے دھان کی خریداری مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے جو وہ پورانہیں کررہی ہے۔انہوں نے واضح کیاکہ پچھلے سات سال سے ریاست میں کسانوں کو کاشت کے لئے مناسب پانی، زرعی مقصد کے لئے 24گھنٹے مفت بجلی اور رعیتو بندھو اسکیم کی وجہ سے ریاست میں دھان کی پیداوار میں کافی اضافہ ہوگیا ہے اور تلنگانہ، دھان کی پیداوار میں ملک میں سرفہرست ہوگئی ہے تاہم مرکزی حکومت تلنگانہ سے دھان کی خریداری نہیں کررہی ہے۔

 دھان کی خریداری کا مطالبہ کرتے ہوئے ٹی آرایس کے ارکان نے آج راجیہ سبھا سے واک آوٹ کردیا۔ٹی آرایس کے ایم پیز نے پارلیمنٹ میں گاندھی جی کے مجسمہ کے قریب دھرنا دیا۔اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے ٹی آرایس کے رکن راجیہ سبھا کے آرسریش ریڈی نے کہاکہ پارلیمانی اورجمہوری اصولوں کے مطابق پارلیمنٹ کی کارروائی نہیں چلائی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ دھان کی خریداری ریاست کا اہم مسئلہ ہے۔اس پر مرکز سے مناسب ردعمل سامنے نہیں آرہا ہے۔انہوں نے کہاکہ خریف اور ربیع کے سیزن کے لئے دھان کی خریداری کے مسئلہ پر مرکز کے نامناسب ردعمل اور رویہ کے نتیجہ میں ریاست کے کسانوں کو مشکلات درپیش ہیں۔اسی لئے یہ احتجاج کیاگیا۔

 انہوں نے مرکزی وزرا کے اس سلسلہ میں موقف کو نامناسب قراردیا اور کہا کہ مرکزی وزیر پیوش گوئل ایک بات کرتے ہیں تو مرکزی وزیر کشن ریڈی اس مسئلہ پر دوسری بات کرتے ہیں۔اس مسئلہ پر مرکزی وزرا میں ہی خود الجھن پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہاکہ اس الجھن کو دور کرتے ہوئے حکومت پارلیمنٹ میں اپنا موقف واضح کرے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.