پسماندہ طبقات کی ذات کی بنیاد پر مردم شماری کرائی جائے، اسمبلی میں قرارداد منظور

پسماندہ طبقات کی ذات کی بنیاد پر مردم شماری کرائی جائے: کے سی آر

حیدرآباد: چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج ذات کی اساس پر پسماندہ طبقات کی مردم شمار کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے جمعہ کے روز اسمبلی میں ایک قرار داد پیش کی۔ تلنگانہ قانون ساز اسمبلی میں اس قرار داد کو بہ اتفاق آرا منظور کرتے ہوئے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ2021 کی مردم شماری میں ذات کی بنیاد پر پسماندہ طبقات کی مردم شمار کرانے کا مطالبہ کیا۔وقفہ سوالات کے بعد چیف منسٹر نے ایوان میں قرار داد پیش کی۔

انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کی آبادی کا نصف حصہ پسماندہ طبقات پر مشتمل ہے۔ ملک کی مختلف سیاسی جماعتوں اور ریاستی اسمبلیوں میں ذات کی بنیاد پر مردم شماری کا مطالبہ کرتے ہوئے قرار داد میں منظور کی گئی ہیں سماج کے غریب طبقات کی ترقی کیلئے ضروری ہے کہ حقائق پر مبنی اعداد وشمار ضروری ہیں۔

ان اعداد وشمار کی بنیاد پر غریب سے غریب تر طبقات کی بہبود کیلئے مختلف اسکیمات متعارف کرائی جاسکتی ہیں۔ پسماندہ طبقات کی بہبود کو یقینی بنانے کو مدنظر رکھتے ہوئے تلنگانہ قانون ساز اسمبلی، مرکزی حکومت سے یہ مطالبہ کرتی ہے کہ 2021 کی جنرل سنسس میں پسماندہ طبقات کی ذات کی بنیاد پر مردم شماری کرائی جائے۔اس سلسلہ میں اسمبلی میں متفقہ طور پر قرار داد منظور کی گئی ہے۔

متعلقہ
ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.