کسانوں کی تحریک کا میاب : اسد الدین اویسی کا ٹوئٹ

اویسی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم، عوامی تحریک سے متاثر نہیں ہوئے مگر وہ ہراساں کیا کرتے تھے۔ اویسی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ سپریم لیڈر کو اب احساس ہوا کہ بلیزس، ان کی مدد کیلئے نہیں آئیں گے۔

حیدرآباد: وزیر اعظم نریندر مودی کے فیصلہ پر جس میں انہوں نے (مودی) نے زرعی تین قوانین کو واپس لینے کا اعلان کیا ہے، پر ردعمل کااظہار کرتے ہوئے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر و ایم پی حیدرآباد اسد الدین اویسی نے جمعہ کے روز کہا کہ کسانوں کی تحریک کامیاب ہوئی ہے، جو قوانین کے خلاف مسلسل احتجاج کررہے تھے۔

ایک ملک ایک الیکشن کی خراب سوچ کی یہ ایک بہترین مثال ہے۔ مائیکرو بلاکنگ سائٹ ٹوئٹر پر اسد الدین اویسی نے کہا کہ ابتدا سے ہی زرعی قوانین غیر آئینی تھے۔ وزیر اعظم کی انا نے کسانوں کو سڑکوں پر آنے کیلئے مجبور کیا۔ اگر حکومت اس طرح کی بچکانہ حرکت نہیں کرتی  تو700 سے زائد کسان اپنی جانو ں سے محروم نہ ہوتے۔ انتخابات کے قریب آنے اور  احتجاجی تحریک کو دیکھتے ہوئے مودی نے دوبارہ سوچا۔

 کسانوں کا آندولن کو مبارکباد، انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم مودی نے یو پی اور پنچاب میں نوشتہ دیوار کو دیکھ لیا۔ اب ان کے پاس اس کے علاوہ کوئی چارہ ہی نہیں تھا۔ اویسی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم، عوامی تحریک سے متاثر نہیں ہوئے مگر وہ ہراساں کیا کرتے تھے۔ اویسی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ سپریم لیڈر کو اب احساس ہوا کہ بلیزس، ان کی مدد کیلئے نہیں آئیں گے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.