کورونا کی صورتحال پر تفصیلی رپورٹ ہائیکورٹ میں پیش

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ریاست میں کورونا پازیٹیو کی شرح بہت کم ہے اور اگر تیسری لہر ابھرتی بھی ہے تو اس کا سامنا کرنے کیلئے تمام سرکاری دواخانوں میں موثر اقدامات کئے گئے ہیں۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے محکمہ صحت عامہ کی جانب سے ریاست میں کورونا کی صورتحال پر ہائی کورٹ میں رپورٹ پیش کردی گئی۔ تین ماہ قبل اسکولس میں فزیکل کلاسس کے آغاز کے بعد طلبا پر کئے گئے کووڈ ٹسٹس میں 195 طلباوائرس سے متاثر پائے گئے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ ریاست میں 42 لاکھ افراد نے ابھی تک کووڈ ویکسین کا ایک بھی ڈوز نہیں لیا ہے جبکہ ایک کروڑ8لاکھ افراد نے دونوں ڈوز لئے چکے ہیں۔ موجودہ طور پر ریاست میں 60 لاکھ کووڈ ٹیکہ دستیاب ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ریاست میں کورونا پازیٹیو کی شرح بہت کم ہے اور اگر تیسری لہر ابھرتی بھی ہے تو اس کا سامنا کرنے کیلئے تمام سرکاری دواخانوں میں موثر اقدامات کئے گئے ہیں۔ ڈائرکٹر پبلک ہیلتھ سرینواس راؤ نے بتایا ک ہ تلنگانہ میں کورونا پازیٹیو شرح0.4 فیصد تک گھٹ گئی ہے۔ ریاست بھر میں 30 سرکاری دواخانوں اور خانگی مراکز پر آر ٹی پی سی آر اور1231 مراکز پر ریاپڈ  ٹسٹس کئے جارہے ہیں۔ریاست بھر میں کووڈ علاج کیلئے سرکاری ہاسپٹلس میں 1327 اور خانگی دواخانوں میں 55442 بیڈس دستیاب ہیں۔

انہوں نے عدالت کو بتایا کہ دواخانوں میں آئی سی یو آکسیجن اور عام بیڈس (صرف2.6فیصد)1527 ہی زیر استعمال ہیں۔ تلنگانہ میں 6مئی سے فیور سروے کا عمل جاری ہے۔ چونکہ قیاس آرائیاں جاری تھی کہ تیسری لہر کے دوران کم عمر بچوں کے متاثر ہونے کے امکانات زیادہ ہیں۔ تو بچوں کو معیاری علاج ومعالجہ کی سہولتوں کی فراہمی کیلئے ریاست بھر میں 6000 بستر تیار رکھے گئے ہیں۔ صحت عامہ اور نیم طبی عملہ کو خصوصی تربیت دی گئی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ ریاست میں 82 آکسیجن پلانٹس تعمیر کئے گئے ہیں۔ جن میں موجودہ طور پر 75 مکمل طور پر کارکرد ہیں اور مزید7 اس ماہ کے اواخر تک کارکرد ہوجائیں گے۔

ڈاکٹر سرینواس راؤ نے کہا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے کووڈ مہلوکین کے افراد کے خاندان میں فی کس50,000 روپے ایکس گریشیاء کی تقسیم کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق ریاست میں کورونا وبا پر قابو پانے کیلئے کئے جارہے اقدامات کے متعلق محکمہ صحت کی جانب سے آج داخل کردہ رپورٹ پر ہائی کورٹ نے اطمینان کا اظہار کیا۔ ہائی کورٹ نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے ہر کام انجام نہیں دیا جاسکتا اور عوام کو بھی احتیاط سے کام لینے کا مشورہ دیتے ہوئے آئندہ سماعت چار ہفتوں کیلئے ملتوی کردی۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.